بول ٹی وی کے اینکر اور مسرت جمشید چیمہ کے درمیان تلخ کلامی کا کلپ وائرل

بول ٹی وی کے اینکر اور مسرت جمشید چیمہ کے درمیان تلخ کلامی کا کلپ سوشل میڈیا پر وائرل۔۔

بول ٹی وی کے اینکر نورالعارفین تحریک انصاف کی مسرت جمشید چیمہ سے الجھ پڑے اور کہا کہ اگر میں نے آپکو اکیلے بٹھا کر پروگرام کیا تو یقینا آپ میرے پروگرام میں کبھی نہیں آئیں گی۔

اینکر نے اپنی مہربانی جتلاتے ہوئے کہا کہ مجھے داد دیجئے کہ میں اپنے ساتھ پیپلزپارٹی ، ن لیگ اور دوسروں کو لیکر بیٹھتا ہوں۔

جس پر مسرت جمشید چیمہ نے نورالعارفین سے کہا کہ آپ مجھے تڑیاں نہ لگایا کرو اور طریقے سے بات کیا کرو، آپ دھمکایا نہ کرو۔ ہم آپکی بہت عزت کرتے ہیں اور امید کرتے ہیں کہ آپ بھی ہماری عزت کریں گے۔میں نے یہ کیا کردیا میں نے وہ کردیا۔

مسرت جمشید چیمہ نے مزید کہا کہ اگر آپکو پتہ ہے کہ میں نے چپ نہیں کرنا تو بہتر ہے کہ آپ مجھے نہ بلاؤ، یہ آپکی چوائس ہے کہ آپ مجھے بلائیں یا نہ بلائیں۔

جس پر اینکر نے کہا کہ میں آج کے بعد آپکو اپنے پروگرام میں نہیں بلاؤں گا۔ میں جب بھی آپکو بلاتا ہوں میری بذلہ سنجی کو آپ طعنہ سمجھتی ہیں۔ اسے کہتے ہیں کہ چور کی داڑھی میں تنکا۔۔

اینکر نے مسرت جمشید چیمہ سے کہا کہ آپ مائیک اتارئیے اور چلے جائیے۔ اگر آپکو لگتا ہے کہ آپ حکومت میں ہیں اور میں آپ سے دب جاؤں گا۔

اینکر نورالعارفین نے کلمہ پڑھتے ہوئے کہا لاالہ الااللہ ۔۔ میں جس صوبے میں بیٹھا ہوں میں تو اسکے وزیراعلیٰ سے نہیں سنبھل رہا،ایک مسرت جمشید چیمہ کیا بگاڑلے گی میرا۔

نورالعارفین کی بدتمیزی سے تنگ آکر مسرت جمشید چیمہ پروگرام چھوڑ کر چلی گئیں ۔

  • کیا بیہودہ اور بدتمیز قسم کا انسان ہے یار یہ ،،، ایسے لوگ باندھ کررکھے جاتے ہیں اور بول والے اسے پروگرام دے بیٹھے ہیں۔ توبہ

  • یہ ایک چول اور بیوقوف قسم کا بندہ ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کسی پہ بار بار تیز تیز بول کے الزامات لگانے کو یہ بندہ صحافت کہتا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >