لندن میں نوازشریف کی چہرہ چھپاکر آنیوالی شخصیت سے ملاقات، اصل ماجرہ کیا ہے؟

مبینہ بیمار نواز شریف کی پر اسرار ملاقات نے نئی بحث چھیڑ دی… لیکن شریف خاندان کا تصدیق یا تردید سے گریز… آخری کیوں؟؟؟ لندن میں موجود صحافیوں کی کیا رائے ہے؟؟ سنیئے تفصیلات

نوید چوہدری نے گزشتہ روز دعویٰ کیا تھا کہ جب شہباز شریف اپنے بھائی نواز شریف کی عیادت کے لیے ایون فیلڈ میں آئے اور انہوں نے اپنے بھائی کے ساتھ چالیس منٹ تک ملاقات جاری رکھی جس میں وہ پہلے پانچ منٹ دروازے کے باہر کھڑے رہے۔ دروازہ بند ہونے کی صورت میں ان کی جانب سے بیل بھی بجائی گئی تاحال دروازہ نہ کھلنے پر انہوں نے افضال بھٹی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ فوری طور پر دروازہ کھولا جائے۔

صدیق جان کے مطابق اس خبر کو اے آروائی کے فرید قریشی، چینل 92 کے غلام حسین اعوان نے بھی رپورٹ کیا کہ اس نقاب پوش شخص کی نوازشریف سے 40 منٹ تک ملاقات ہوئی۔ جب وہ پچھلے گیٹ سے نکلا تو اس سے سوالات کئے گئے لیکن اس نے سوالوں کے جواب دینے سے انکار کیا۔

ایک رپورٹر کوثر کاظمی کے مطابق یہ ایک سادہ سا معاملہ ہے اور وہ ایک سرکاری ملازم ہیں اور وہ یہ بتانا نہیں چاہتے کہ وہ میاں صاحب کی عیادت کیلئے گئے ہیں، انکی نوکری چلی جائے گی۔ اس معاملے کو اتنی ہائیپ دینے کی ضرورت ہے۔

سوال یہ کھڑا ہوتا ہے کہ اگر وہ عیادت کیلئے گئے ہیں تو انہیں کیا ضرورت ہے چہرہ چھپا کر ملاقات کرنے اور پچھلے دروازے سے چھپ کر نکلنے کی۔ کچھ تو ہے جس کی پردہ داری ہے۔ پچھلے دنوں ٹی وی چینلز پر یہ باتیں ہوتی رہیں کہ میاں نوازشریف سے کچھ اہم شخصیات کی ملاقاتیں ہوتی رہیں اور لندن میں موجود تھیں۔

یہاں یہ سوال اٹھتا ہے کہ ایک شخص نوازشریف سے مل تو لیتا ہے لیکن پارٹی رہنماؤں کو اجازت نہیں ہے کہ وہ فلیٹ کے اندر جاسکیں جیسے نہال ہاشمی کو اندر نہیں جانے دیا گیا اور ن لیگ کے رہنما نوازشریف کی سالگرہ کا کیک سڑک پر کاٹتے ہیں۔ انہیں اتنی بھی عزت نہیں دی گئی کہ انہیں فلیٹ کے اندر لیجاکر نوازشریف کے سامنے بٹھایا جائے اور کیک کٹوایا جائے


  • 24 گھنٹوں کے دوران 🔥

    View More

    From Our Blogs in last 24 hours 🔥

    View More

    This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

    >