میرے بیان "سکون صرف قبرمیں” کی غلط تشریح کی گئی، وزیراعظم عمران خان


تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کا نمل یونیورسٹی میں منعقدہ تقریب کے دوران اپنے بیان کہ سکون صرف قبر میں کی وضاحت کرتے ہوئے کہنا تھا کہ میرے اس بیان کو لوگوں نے اپنے ذاتی مقاصد کے لیے توڑ مروڑ کر پیش کیا اور مزاق اڑایا گیا۔تقریب سے خطاب میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ میرے کہنے کا مطلب تھا کہ انسان قبر میں جانے تک سیکھتا ہے اور آگے بڑھنے کے لئے جدوجہد کرتا رہتا ہے۔ جس کا حکم نبی پاکؐ نے بھی دتے ہوئے کہا کہ پیدائش سے لیکر قبر میں جانے تک علم حاصل کرو۔ اپنے بیان میں انکا مزید کہنا تھا کہ جو انسان برے وقت میں گھبرا جاتا ہے وہ کبھی آگے نہیں بڑھ پاتا۔

نمل یونیورسٹی کے کانووکیشن کی تقریب سے خطاب میں وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مسلسل جدوجہد کرنے کا درس دنیا کے سب سے عظیم لیڈر نبی پاک صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے خود دیا ہے اور کہا کہ اپنے اندر جدوجہد کرنے کی طاقت پیدا کی جائے تاکہ آگے بڑھ سکوں۔

تقریب سے عمران خان نے شاعر مشرق علامہ اقبال رحمتہ اللہ علیہ کا شعر بھی پڑھ کر سنایا کہ
"ستاروں کے آگے جہاں اور بھی ہیں ”
"ابھی عشق کے امتحان اور بھی ہیں”
جس کی وضاحت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایک ستارے پر پہنچ کر رکنے کی بجائے اس سے اور بھی آگے جاؤ۔


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

>