اینکر عمران خان کے ہاتھوں نوازشریف کی وائرل تصویر کا پوسٹمارٹم

نوازشریف کی تصویر کس نے کھینچی؟ تصویر وائرل کرنے کا مقصد کیا ہے؟ اینکر عمران خان کے ہاتھوں نوازشریف کی وائرل تصویر کا پوسٹمارٹم

اپنے ویڈیو بلاگ میں اینکر عمران خان کاکہنا تھا کہ یہ تصویر چھپ کر نہیں لی گئی بلکہ نوازشریف اور انکے ساتھ بیٹھے لوگوں کو معلوم تھا کہ یہ تصویر لی جارہی تھی کیونکہ اگر تصویر لی جاتی تو نوازشریف کے ساتھ بیٹھی خواتین کے پیچھے سے لی جاتی جبکہ یہ تصویر سامنے سے لی گئی ہے۔

اینکر عمران خان نے دعویٰ کیا کہ یہ تصویر نوازشریف کے صاحبزادے کے دفتر سے لی گئی ہے۔

اینکر عمران خان نے اس تصویر کا پوسٹمارٹم کیا اور کہا کہ اگر آپ غور کریں تو انکے ساتھ بیٹھی خواتین نے ماسک پہن رکھا ہے جبکہ نوازشریف نے نہیں۔ اگر انکے ہاتھ کی طرف دیکھیں تو ہاتھ میں ایک کپڑا ہے جو ایسا لگ رہا ہے کہ ماسک ہے ۔ اگر ان خواتین کے پیروں کے نیچے دیکھیں تو ایک مرد کے جوتے کے نشانات نظر آتے ہیں لیکن وہ مرد نظر نہیں آرہا ۔ ن لیگی میڈیا سیل نے یہ تصویر شئیر کرتے ہوئے ان جوتوں کو کور کرنے کی کوشش کی ہے۔

اینکر عمران خان کے مطابق ایک اور تصویر بھی زیرگردش ہے لیکن اس میں یہ مردانہ جوتے نظر نہیں آرہے۔

اینکر عمران خان کا کہنا تھا کہ اگر آپ تحریک انصاف اور ن لیگ کے سوشل میڈیا اکاؤنٹس دیکھیں تو اس تصویر کو تحریک انصاف سے زیادہ ن لیگ نے شئیر کیا ہے۔ دراصل یہ تصویر ن لیگ نے خود ہی بنائی ہے تاکہ اپنے سپورٹرز کو یہ پیغام دیا جاسکے کہ نوازشریف بالکل صحت مند ہے اور وہ ملک کی قیادت کیلئے دستیاب ہیں کیونکہ اس وقت شہبازشریف ٹی ٹی سکینڈل میں نیب کی زد میں ہیں اور انکی قیادت پر بھی سوالات اٹھ رہے ہیں۔

ایسے میں یہ تصویر آنے کا مقصد ن لیگی سپورٹرز کو حوصلہ فراہم کرنا اور یہ بتانا ہے کہ ن لیگ کے اصل قائد نوازشریف ہی ہیں۔ مریم نواز اس تصویر کو باربار ری ٹویٹ کررہی تھیں اور انہیں آخر میں یہ کہنا پڑا کہ میرے شیرو! بس کردو، میں ری ٹویٹ کرکرکے تھک گئی ہوں۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More