شہبازشریف کی پیشی : لیگی کارکنان نے احتیاطی تدابیر کی دھجیاں اڑادیں

شہباز شریف نیب میں کورونا موجودگی سے ڈرتے رہے اور عدالت پیشی پر ان کے اپنے ہی کارکنان چڑھ دوڑے

شہبازشریف ایک روزہ روپوشی کے بعد جب ہائیکورٹ کے احاطہ عدالت پہنچے تو کارکنوں کی بڑی تعداد نے انہیں گھیر لیا ،دھکم پیل بھی جاری رہی ،ایسی صورتحال میں سماجی فاصلے ،احتیاطی تدابیر کو ہوا میں اڑا دیا گیا۔

شہباز شریف کی عدالت پیشی کے موقع پر احاطہ عدالت میں رش کی وجہ سے دھکم پیل کا منظر بھی دیکھنے کو ملا ،ن لیگی کارکنان نے کرونا سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر کو نظر انداز کردیا گیا۔اکثر افراد نے ماسک نہیں پہن رکھا تھا ،سماجی فاصلے کا بھی خیال نہیں رکھا گیا۔

شہبازشریف نیب میں کرونا کی موجودگی سے ڈرتے رہے لیکن انکے اپنے ہی کارکنان شہباز شریف پر چڑھ دوڑے اور اپنے قائد کی جھلک دیکھنے کیلئے دھکم پیل کرتے رہے۔۔کارکنان کی دھکم پیل کی وجہ سے شہبازشریف کو دھکے بھی پڑے اور شہباز تین چار بار گرتے گرتے بھی بچے۔

شہباز شریف کے قریب کھڑے کارکنان میں سے اکثر نے نہ ماسک پہن رکھا تھا اور نہ سماجی فاصلے کا خیال رکھا،ایس او پیز کی دھجیاں اڑادی گئیں۔

سوشل میڈیا صارفین کے مطابق جس طرح ن لیگی کارکنان نے کرونا سے بچاؤ کی ایس او پیز کی دھجیاں اڑائی ہیں، سماجی فاصلے کاخیال نہیں رکھا اور شدید بداحتیاطی کی ہے اس سے کرونا مزید پھیلنے کا خدشہ ہے۔

خیال رہے شہباز شریف نے نیب میں نہ پیش ہونے کا جواز کورونا وائرس کے خدشے کو بنایا تھا ،نیب کو جمع کرائے گئے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ میری عمر 69 سال ہے،کینسر کا مریض ہوں،کورونا وائرس اس وقت عروج پر ہے تو میں اس صورتحال میں پیش نہیں ہوسکتا،ان کے نہ پیش ہونے پر نیب ٹیم نے ماڈل ٹائون رہائشگاہ پر چھاپا مارا تھا لیکن شہبازشریف گھر سے رفوچکر ہوگئے جس پر نیب کی ٹیم خالی ہاتھ واپس آگئی

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More