پلوشہ خان ٹاک شوز میں کس قسم کی اخلاق سے گری اور نازیبا زبان استعمال کرتی رہیں؟

پلوشہ خان کی ماضی میں استعمال کی گئی گھٹیا زبان اور پی ٹی آئی لیڈران پر ذاتی حملے ۔۔ کبھی وزیراعظم پاکستان کو گدھے سے تشبیہ دینا، کبھی وفاقی وزراء کو پاگل کتے کہنا، کبھی مراد سعید ، وزیراعظم عمران خان اور پی ٹی آئی لیڈران پر ذاتی حملے، کبھی ٹاک شوز میں پی ٹی آئی رہنماؤں سے بدتمیزی

دو روز قبل پلوشہ خان نے منصور علی خان کے شو میں کہا کہ آپ کسی گدھے پر 22 سال کتابیں لاتے رہے تو وہ گدھا ہی رہتا ہے لیڈر ہیں۔ جس پر تحریک انصاف کے رہنما یاور بخاری نے احتجاج کیا لیکن منصور علی خان بجائے پلوشہ خان کو گھٹیا زبان استعمال کرنے سے روکنے کے محظوظ ہوتے رہے اور ایک بار بھی پلوشہ خان کو نہ ٹوکا

پلوشہ خان اس سے قبل بھی کئی بار بازاری اور گھٹیا زبان استعمال کرچکی ہیں۔ کبھی مراد سعید پر ذاتی حملے، کبھی وزیراعظم عمران خان پر پرسنل اٹیکس، کبھی پی ٹی آئی لیڈران سے بدتمیزی

کچھ ہفتوں قبل پلوشہ خان نے انتہائی غیر اخلاقی بیان دیا تھا جب اس نے تحریک انصاف کے لیڈران کو پاگل کتے قرار دیا اور کہا کہ وفاقی حکومت نے درجن بھر پاگل کتے سندھ پر چھوڑدئیے ہیں، ہمارے پاس پاگل کتوں کیلئے بھاری مقدار میں زہر کی گولیاں ہیں لیکن میں انکے مالک کو یہ بتانا چاہتی ہوں کہ یہ پاگل کتے کسی بھی وقت اپنے مالک کو بھی کاٹ لیتے ہیں۔

صرف یہی نہیں کچھ ماہ قبل پلوشہ خان ن لیگ کے رانا ثناء اللہ کی حمایت میں پی ٹی آئی لیڈران سے متعلق نازیباالفاظ استعمال کرتی رہیں اور کہتی رہیں کہ سونگھنے والے سراغ رساں کتوں کو ڈی چوک پر چھوڑیں اور پھر دیکھیں وہ کونسے بڑے گھر داخل ہوتے ہیں اور وہاں سے منشیات کی کتنی بڑی کھیپ برآمد ہوتی ہے

صرف یہی نہیں پلوشہ خان ریحام خان کی کتاب کا حوالہ دیکر مراد سعید پر ذاتی حملے کرتی رہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >