مائنس ون کے بعد مائنس تھری کی گونج

مائنس ون کے بعد مائنس تھری کی گونج۔۔کن 3 کے مائنس ہونے کی بات کی گئی؟ سب بڑوں کی اہم بیٹھک کیوں؟مائنس ون کی خبریں پھیلانے والے کون لوگ ہیں؟

صدیق جان نے سوال کیا کہ عمران خان کو ہٹاکر کسے وزیراعظم کے طور پر لایا جائے گا؟ تحریک انصاف کے اندر تو پہلے سے ہی بہت لڑائیاں ہیں۔ ایک دوسرے کی ٹانگیں کھینچی جارہی ہیں، اس صورتحال میں کوئی ایسا شخص نہیں جو عمران خان کی جگہ لے سکے۔فوادچوہدری نے ٹھیک کہا تھا کہ آپسی لڑائیوں کی وجہ سے ہماری کارکردگی متاثر ہورہی ہے۔

شیخ رشید کے اس بیان "اگر مائنس ون ہوگا تو پھر مائنس تھری ہوگا” کا مطلب ہے کہ سسٹم ہی لپیٹ دیا جائے گا۔ یہ نہیں ہوسکتا کہ آپ عمران خان کو ہٹاکر شہباز شریف یا بلاول کو لے آئیں۔ یہ کیسے ممکن ہے کہ جن پر کرپشن کے کیسز چل رہے ہیں ان کو لایا جائے؟ ایک پارٹی پر جعلی اکاؤنٹس کا کیس ہے، دوسرے پر پانامہ، شہبازشریف پر تو منی لانڈرنگ اور ٹی ٹیز کا کیس ہے۔ یہ اتنا آسان نہیں ہے کہ عمران خان کو ہٹاکر انہیں لایا جائے۔ ویسےبھی حالات ایسے نہیں ہیں۔

صدیق جان کا مزید کہنا تھا کہ آپ پچھلے ایک سال کی ویڈیوز اٹھاکر دیکھیں ، یہ تو پچھلے ایک سال سے کہا جارہا ہے کہ اس مہینے حکومت چلی جائے گی، پھر کہا گیا کہ مولانا فضل الرحمان آئیں گے تو حکومت چلی جائے گی، مولانا گئے تو پھر کہا گیا کہ دسمبر میں حکومت چلی جائے گی، دسمبر گزر گیا تو کہا گیا کہ مارچ میں حکومت جائے گی۔ کم از کم 20، 22 بار تاریخیں دی گئی ہیں۔

صدیق جان کے مطابق یہ کچھ لوگوں کی خواہش ہے، اپوزیشن بھی سنجیدہ نظر نہیں آرہی، اپوزیشن ایک دوسرے سے مخلص نہیں، آف کیمرہ ایک دوسرے کے خلاف باتیں کرتے ہیں ۔ مولانا فضل الرحمان کو ان دونوں پر اعتماد نہیں ہے، جب وہ دھرنا لیکر آئے تو انہوں نے ان دونوں پارٹیوں پر الزامات لگائے۔ یہ ٹی وی پر ایک دوسرے کے خلاف بات نہیں کرتے لیکن آف کیمرہ ایک دوسرے کے خلاف بات کرتے ہیں۔

  • اگر اسٹیبلشمنٹ کے پیٹ میں کوئی درد زہ اٹھ رہا ہے تو سابقہ کرپٹ حکومتوں کا ہی کوئی کرپٹ  بندہ لانا اسٹبلشمنٹ کی مجبوری ہے تو میں ایک بہترین ٹیم  ہوں اسٹبلشمنٹ کا درد زہ بھی دور ہو جائیگا اور ایک نئے بچے کی  پیدائش بھی ہو جائے گی         ٹیم …. صدر چودہری منیر ٹھیکیدار عرف منیرا …… رحیم یار خانی دبئی والوں کا تلوری سپلائر نائب صدر بریگیڈیئر مختار اسلام آباد ائیرپورٹ پر دس ارب رو پے کی لوٹ ماراپنے سپلائر پارٹنر کے ساتھ مل کر کرنے والا  پرائم منسٹر نواز شریف بٹ اگر اس سے پہلے وہ مر گیا تو فراری بٹ قطری والی وہ مر گئی تو     کیپٹن صفدر کو بنا دیں وہ بھی ڈبل شفٹ میں چیف آف آرمی سٹاف نوید مختار کوریٹایریمنٹ سے ایک دن پہلے سے بیس سال کی ایکسٹنشن دے کر بنا دیا جائے کیانی کو بھی اسی فورمو لے سے جائنٹ چیف آف سٹاف بنا دیا جائے اور اسکے دونو کرپٹ بھائیوں  اور فرنٹ  مینز کو ڈی جی آئی ایس آئی اور ڈی جی ایم آئی خواجہ سرا آصف چوہے کو ڈیفنس منسٹر منشیات فروش اور ماڈل ٹاؤن کے قاتل رانا ثنا الله کو وزیر داخلہ اور باقی  کرپٹ لوگوں کو چن چن کر انکی کرپشن کے حساب سے سیٹ دی جائیں اور ہر تعیناتی تاحیات ہونی چاہیے اور آئین میں ترمیم کر کے پھانسی کی سزا مقرر کی جائے اگر نواز شریف بٹ کے خاندان اور پارٹی سے باہر کوئی بندہ ان سیٹس کی کوشش کرے 


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >