پرویز ہودبھائی نے معروف ماہرتعلیم مریم چغتائی کو فسادی قرار دیدیا

، مریم چغتائی جیسے لوگ ہمارے بیچ میں فساد پیدا کریں گے۔ پرویز ہودبھائی نے معروف ماہرتعلیم مریم چغتائی کو فسادی قرار دیدیا

ماہر تعلیم مریم چغتائی نے کہا کہ حکومت جو یکساں تعلیمی نصاب بنارہی ہے، میں بھی اس کا حصہ تھی، اس پر مختلف افواہیں گردش کررہی ہیں۔ ایک افواہ تو یہ گردش کررہی ہے کہ ایک صاحب نے کالم لکھا کہ یہ نصاب کسی امریکی ایجنڈے کا حصہ ہے ۔ ایک اور کالم ان (پرویز ہودبھائی)کا نظر سے گزرا جس میں لکھا تھا کہ یہ نصاب کسی دینی ایجنڈے کا حصہ ہے جو سکولوں کو مدرسے بنادے گا۔ڈاکٹر صاحب نے یہ بھی لکھا کہ شاید یہ نصاب کسی خفیہ ایجنڈے کا نفاذ ہے۔

مریم چغتائی نے مزید کہ کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ یہ نصاب سکولوں کو مدرسے نہیں بلکہ بلکہ پہلی دفعہ مدرسوں کو سکول بنانے جارہا ہے۔

پرویز ہودبھائی نے کہا کہ حکومت نے فوج کا بجٹ بڑھادیا اور تعلیم کا بجٹ گھٹادیا، اس نصاب سے مدارس اور سکولز اسلامیات اور اردو میں آگے ہوں گے لیکن سائنسی علوم میں پیچھے رہ جائیں گے ، حکومت نے سائنس لیب پر کوئی توجہ نہیں دی

جس پر مریم چغتائی نے کہا کہ ابھی تک تو ہم نے کچی جماعت سے پانچویں جماعت کا نصاب بنایا ہے۔ڈاکٹر صاحب نے کہا کہ اسلامیات کا نصاب بہت زیادہ بڑھادیا ہے، یہ بچوں کی کتاب میرے سامنے پڑی ہے، بچوں کو سچ بولنے، بڑوں کا ادب کرنے ، اچھے اخلاق جیسی تعلیم کیلئے کونسی لیب کی ضرورت ہے۔ بچوں کو چوتھی جماعت میں سادگی، وقت کی پابندی، دیانتداری، صوفیائے کرام یہ ہمارا اسلامیات کا نصاب ہے۔

اس پر پرویز ہودبھائی نے کہا کہ مریم صاحبہ! آپکو پتہ نہیں ہے کہ دین مواد حفظ کرنے کیلئے کتنا وقت چاہئے، آپ نے تو اسکی طرف اشارہ بھی نہیں کیا۔ صرف اسلامیات ہی نہیں اور بھی دنیا کے بہت سے تقاضے ہیں۔آپ نے اپنے نصاب میں یہ تو بتایا نہیں کہ ٹریفک قوانین کی پابندی ہے، اشارہ توڑنا بہت بڑا جرم ہے۔

پرویز ہودبھائی نے کہا کہ انہوں نے چوری چھپے اس تعلیمی نصاب میں ایسی تبدیلیاں لائی ہیں جس سے یہ قوم برباد ہوگی۔ جیسے جیسے آپ اوپر کی جماعتوں میں جاتے ہیں، ویسے ویسے مکاتب فکر میں فرق آتا جاتا ہے اور ویسے ویسے لوگوں میں جھگڑے ہوتے ہیں اور یہ یاد رکھئے کہ پاک آرمی کو ردالفساد کا آپریشن کرنا پڑا۔ یہ نہیں کہ کسی باہر والے نے ہم پر حملہ کیا تھا ، یہ مسلمانوں کے بیچ میں فساد تھا اور یہ لوگ ، مریم چغتائی جیسے لوگ ہمارے بیچ میں فساد پیدا کریں گے۔

  • بے ھود بھائی جیسے نقب زنوں سے پوری اسلامی تاریخ
    بھری پڑی ہے
    یہ اسلام دشمن قوتوں کے آلہ کار بن کر اسلام کو
    نقصان پہنچا رہا ہے-

  • I believe many of us Pakistanis cannot understand the extent/thought process of professor, he is absolutely right … its like having the right man at the wrong time and i seriously doubt the professor will live long enough, you can clearly see his anger building inside, unfortunately in Pakistan many generations need to die before we can have a fresh/ progressive/scientific start, agar we are so much muhib-e-watan i don’t understand why we leave Pakistan for Education, Job or better living standard or send our kids outside so we can clearly see how progressive world lives and sees things, we are full of hypocrites ourselves


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >