مسئلہ کشمیرپرپاکستان سعودی عرب کی مدد کے بغیر بھی آگے بڑھ سکتاہے،وزیر خارجہ

کشمیر کے معاملے پر پاکستان سعودی عرب کی مدد یا اس کے بغیر بھی آگے بڑھ سکتا ہے، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سعودی عرب کی زیرقیادت اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) سے کہا ہے کہ وہ مسئلہ کشمیر پر وزرائے خارجہ کی کونسل کے اجلاس کے انعقاد کے موقع پر پیر کھینچنا بند کرے۔

وزیر خارجہ نے نجی میڈیا چینل سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میں ایک بار پھر احترام کے ساتھ او آئی سی کو بتا رہا ہوں کہ وزرائے خارجہ کونسل کا اجلاس ہماری توقع ہے۔ اگر آپ اس کو طلب نہیں کرسکتے ہیں تو پھر میں وزیراعظم عمران خان سے اسلامی ممالک کا اجلاس طلب کرنے کا مطالبہ کروں گا جو مسئلہ کشمیر پر ہمارے ساتھ کھڑے ہونے اور مظلوم کشمیریوں کی حمایت کے لئے تیار ہیں۔

پاکستان سعودی عرب کے ساتھ یا اس کے بغیر "آگے بڑھے گا” جب یہ پوچھا گیا کہ کیا کہ سعودی عرب کے ساتھ یا بغیر توانہوں نے کہا کہ پاکستان مزید انتظار نہیں کرسکتا۔

پاکستان او آئی سی سے وزرائے خارجہ کا اجلاس طلب کرنے کے لیے زور دے رہا ہے جس میں 57 ممالک کے نمائندے شریک ہوں گے اس کو اقوام متحدہ کے بعد سب سے بڑا پلیٹ فارم کہا جاتا ہے۔

اس سے قبل شاہ محمود قریشی نے پاکستان کے لئے وزرائے خارجہ کانفرنس کی اہمیت کی وضاحت کی تھی۔ تب انہوں نے کہا تھا کہ مسئلہ کشمیر پر امت مسلمہ کی طرف سے واضح پیغام بھیجنے کی ضرورت ہے۔

اگرچہ گزشتہ سال اگست سے نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر کشمیر سے متعلق رابطہ گروپ کی میٹنگ ہو رہی ہے اور او آئی سی کے آزاد مستقل انسانی حقوق کمیشن نے مقبوضہ وادی میں حقوق کی پامالی کے بارے میں بیانات دیئے ہیں ، لیکن اس میں کوئی پیشرفت نہیں ہو سکی۔

وزرائے خارجہ کے اجلاس کو طلب نہ کرنے کے پیچھے ایک بڑی وجہ سعودی عرب کی طرف سے کشمیر سے متعلق خصوصی طور پر پاکستان کی درخواست کو قبول کرنے سے گریز کرنا ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان نے گزشتہ دسمبر میں سعودی درخواست پر کوالالمپور سمٹ چھوڑ دیا تھا اور اب پاکستانی مسلمان جو مملکت کے لئے اپنی جان دینے کے لئے تیار ہیں ، ریاض سے مطالبہ کررہے ہیں کہ وہ "اس معاملے پر قیادت دکھائیں”۔
“ہماری اپنی حساسیتیں ہیں۔ آپ کو اس کا احساس کرنا ہوگا۔ خلیجی ممالک کو یہ سمجھنا چاہئے۔

شاہ محمود قریشی نے واضح پیغام دیا کہ ہم کشمیریوں کے دکھوں پر اب خاموش نہیں رہ سکتے۔

  • Can’t believe this saudi ashrafia Qibla honay ka faida utha rha lakin harkatain munafiqo wali hai lanat hai aisi ashrafia PR Jo sirf apny mulk ka sochy baki Puri ummah beshak marti rhy aj ki Saudi ashrafia khalafat Rashida k door sy mukhtalif nahi J’s Hussain nami k kehny PR khalafat Rashida sy lataluk hogy thy

    • Mr Thewizard u r comparing present Saudi Givt with Khelafat e rashdah .I think u R follower of hassan bin Sabah the JEW who missguided the socalled Muslims who r still creating hait against Khelafat e Rashdah. Khelafat e Rashdah was the best era of Muslims history.

  • آل سعود کا روز اول سے ایجنڈا رہا ہے کہ اسلام کو نقصان پہنچائیں
    ان کو لانے کا مقصد ہمیشہ سے یہی رہا ہے —– جب تک یہ خاندان
    مسند شاہی پر موجود ہے — اسلام کبھی سر نہیں اٹھا سکے گا
    😡😡😡

  • What Shah Mehmood Qureshi said today is the voice of the heart of the Pakistani people
    I pay homage to the wonderful words of Shah Mehmood Qureshi
    The Pakistani government should sever OIC ties with all countries that do not work in Pakistan’s difficult circumstances
    Everyone has a war of their own interests and these Islamic countries have no sympathy for Kashmiri Muslims

  • Very shrewd move, i love the way foreign policy is handled by this govt, Saudia if don’t respond to this will blamed for not supported Pakistani Muslims if show its support suffer the backlash from India. What a stroke it is, also to ponder that as Saudia will not help in this matter (like we all know) this will give us more justification to be closer to China, as non of Muslim countries are helping us hence we have no other choice 😀


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >