ن لیگ سی سی پی او لاہور عمر شیخ سے کیوں ڈری ہوئی ہے؟

ن لیگ ایک سیاسی جماعت ہے لیکن وہ ایک سی سی پی او سے اتنا ڈری ہوئی کیوں ہے؟ عمر شیخ آخرہے کون اور انہیں لاہور میں کیوں لایا گیا؟ عدیل وڑائچ نے عمر شیخ کا حیران کن بیک گراؤنڈ بتادیا

سینٹ میں کل کی کاروائی کا احوال بتاتے ہوئے عدیل وڑائچ نے کہا کہ سینٹ میں موٹروے کے اندوہناک سانحے پر بات ہورہی تھی لیکن ن لیگ وہاں ایسا تاثر دے رہی تھی جیسے نہ صرف لاہور بلکہ پنجاب میں جرائم کی وجہ صرف ایک ہی شخص ہے اور وہ ہے سی سی پی او لاہور۔۔

عدیل وڑائچ کا کہنا تھا کہ ن لیگی سینیٹر آصف کرمانی اور پرویز رشید نے سی سی پی او لاہور پر بات کی۔ آصف کرمانی نے کہا کہ ہم پر نوری نت مسلط کردیا گیا ہے اور اسے لاہور میں لگانے کا ایک ہی مقصد ہے اور وہ صرف یہ ہے کہ اپوزیشن کو انتقام کا نشانہ بنانا، اپوزیشن کے خلاف انتقامی کاروائی کرنا۔

ن لیگی سینیٹر ز کا کہنا تھا کہ سی سی پی او لاہور عمر شیخ کی معافی کسی طور پر قابل قبول نہیں اور یہ کسی مسئلے کا حل نہیں، مسئلے کا حل صرف یہ ہے کہ سی سی پی او لاہور استعفیٰ دے۔ راجہ ظفرالحق نے کہا کہ میں حیران ہوں کہ ابھی تک سی سی پی او لاہور کو فارغ کیوں نہیں کیا گیا؟ وہ یہ تاثر دے رہے تھے کہ پنجاب تب ہی ٹھیک ہوگا جب سی سی پی او کو فارغ کیا جائے گا۔

عدیل وڑائچ کا کہنا تھا کہ ان کی باتیں سن کر مجھے انداز ہ ہوا کہ ن لیگ واقعی اس سی سی پی او سے پریشان ہے کیونکہ سینٹ ایسا فورم ہے جہاں ن لیگ نے اس سانحہ پر بات کرنا تھی، قانون سازی اور حکومت کو تجاویز دینا تھیں کہ اس طرح کے افسوسناک واقعے کو روکنے کیلئے کیا قانون سازی کرنی ہے لیکن انکا یہی اصرار تھا کہ اس افسر کو ہٹایا جائے۔

عدیل وڑائچ نےن لیگ کے سی سی پی او کو ہٹانے کے مطالبے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ کچھ ہفتے قبل نیب دفتر کے باہر جو کچھ ہوا اسکے بعد سی سی پی او کو لایا گیا۔ ن لیگ کی جڑیں پنجاب کی بیوروکریسی کے اندر تک پھیلی ہوئی ہیں، وہ بس یہی چاہتی ہیں کہ وہ جو چاہے کریں انہیں کوئی نہ روکے لیکن جب عمر شیخ کو لایا گیا تو ن لیگ نے شور مچانا شروع کردیا۔

عدیل وڑائچ کا کہنا ہےکہ عمر شیخ ایک دبنگ افسر ہے، انکے بارے میں مشہور ہے کہ وہ اپنے پیٹی بند بھائیوں کو بھی ہتھکڑیاں لگوادیتے تھے۔عمر شیخ جب سی سی پی او لاہور بنے تو انہوں نے پولیس افسران کا اجلاس بلایا جس میں اس نے کہا کہ لاہور میں کچھ بھی ہو اس پر آپ مجھے رپورٹ کریں، آئی جی شعیب دستگیر کو اسکا پتہ چل گیا اور اس نے کہا کہ میں تو اس افسر کے ساتھ کام نہیں کرسکتا۔

عدیل وڑائچ نے انکشاف کیا کہ انہیں دیکھ کر لگتا ہے کہ ٹیپیکل پنجاب پولیس کے افسر ہیں لیکن انکا حیران کن بیک گراؤنڈ ہے۔ یہ واشنگٹن اور بدنام زمانہ گوانتاناموبے جیل میں بھی رہے ہیں۔ انہوں نے امریکہ کی جارج واشنگٹن یونیورسٹی سے ڈیجیٹل فرانزک اور سائبر کرائم میں کورسز کئے ہوئے ہیں۔ انہوں نے برطانیہ کی خفیہ ایجنسی ایم آئی سکس کے ساتھ تربیت لی ہوئی ہے۔ یہ ڈی آئی جی اسپیشل پروٹیکشن یونٹ رہے ہیں، سی پیک حکام کے ذمے ساری سیکیورٹی انکے ذمے ہوتی تھی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >