الیکشن کی رات خواجہ آصف نے آرمی چیف کو فون کیوں کیا؟ خواجہ آصف نے وجہ بتادی

الیکشن کی رات خواجہ آصف نے آرمی چیف جنرل قمر باجوہ کو فون کیوں کیا؟ خواجہ آصف نے وجہ بتادی۔

نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ آصف نے کہا کہ عسکری قیادت سے ملاقات میں الیکشن میں دھاندلی کے ذکرپر آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے مجھ سے کہاکہ میں نے اُنہیں الیکشن سے پہلے فون کیا تھا۔

خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ عسکری قیادت سے میٹنگ میں قومی احتساب بیورو (نیب) یا نیب آرڈننس پر کوئی بات نہیں ہوئی۔میٹنگ سے ایک روز قبل فون آیا کہ آرمی چیف گلگت بلتستان پرمیٹنگ چاہتے ہیں اور میٹنگ کیلئے پارلیمانی پارٹیز کو بلایاگیا ہے۔

خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ کوئی پارٹی بھی میٹنگ سے غیرحاضر نہیں تھی، شیری رحمان نے معاملہ اٹھایا کہ وزیر اعظم عمران خان بھارت کے حملے پر ہوئی میٹنگ میں بھی نہیں آئے تھے اور آج بھی میٹنگ میں وہ نہیں آئے، شیری رحمان نے کہا پانچواں صوبہ بنایا جا رہا ہے، یہ ایک اہم آئینی معاملہ ہے، اس معاملے پر وزیراعظم کی شرکت ضروری تھی۔

خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ الیکشن میں دھاندلی کے ذکرپر آرمی چیف نے مجھ سے کہاکہ میں نے انہیں الیکشن سے پہلےفون کیا تھا، آرمی چیف نے ملاقات میں بتایا کہ انہوں نے مجھے کہا تھا سب ٹھیک ہوگا۔

خواجہ آصف نے مزید کہا کہ میں نے آرمی چیف سےکہاتھا کہ پولنگ اسٹیشنز کے نتائج فارم 45 کے بجائے سفید کاغذوں پر دیے جارہے ہیں اور بڑے پیمانے پر دھاندلی ہو رہی ہے جس پر آرمی چیف نے مجھ سے کہاکہ آپ فکرنہ کریں، سب ٹھیک ہوگا۔

انہوں نے بتایا کہ میٹنگ میں آرمی چیف نے کہاکہ گلگت بلتستان بہت اہم مسئلہ ہے، گلگت بلتستان سی پیک کا دہانہ ہے لہٰذا ہمیں گلگت بلتستان کے مسئلے کو فوری حل کرنا چاہیے۔

واضح رہے کہ شیخ رشید نے کہا تھاکہ آرمی چیف سے ملاقات کے دوران شرکاء میں سے ایک کو کہا گیا آپ نے الیکشن کی رات فون کیا۔ عسکری قیادت کو فون کرنے والے پارلیمنٹیرین کا نام خواجہ آصف ہے۔اس فون پر عسکری قیادت نے خواجہ آصف سے کہا کہ دھاندلی نہیں ہو گی اور پھر خواجہ آصف نشست جیتے۔

  • اپوزیشن نے جو حال اینٹی منی لانڈرگ بل کا کیا۔ خطرہ یہ تھا کہ گلگت بلتستان کے معاملے میں بھی اپوزیشن وزیر اعظم کی بات سے انکار کر لیتے اس لیے انہیں فوجی زبان میں سمجھانا پڑا ہے۔ شائد۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >