آرمی چیف سے دو ملاقاتیں کرنیوالے محمد زبیر کے بیانات میں تضادات

آرمی چیف سے دو ملاقاتیں کرنیوالے محمد زبیر کے بیانات میں تضادات۔۔ محمد زبیر ایک چینل پر کچھ کہتے رہے اور دوسرے چینل پر کچھ

گزشتہ روز ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے رہنما محمد زبیر نے آرمی چیف سے 2 ملاقاتیں کی ہیں اور یہ ملاقاتیں مریم نواز اور نوازشریف سے متعلق تھیں جس کے فوری بعد محمد زبیر سامنے آگئے اور اپنا اور اپنی قیادت کا دفاع کرنے لگے۔ محمد زبیر چینلز پر تو جلوہ گر ہوگئے لیکن دفاع کے دوران محمد زبیر کے کئی متضاد بیانات سامنے آئے ۔

نجی چینل اے آروائی پر کاشف عباسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے محمود زبیر نے کہا کہ آرمی چیف سے ملاقات کے بعد میں نےمریم نواز اس ملاقات سے آگاہ کیا تھا ،اس پرکاشف عباسی نے سوال کیا کہ پہلی ملاقات کے بعد آپکو مریم نواز نے نہیں کہا کہ آرمی چیف سے نہ ملاکریں؟ جس پر محمد زبیر نے کہا کہ جی بالکل!

جبکہ محمد زبیر شاہزیب خانزادہ کے شو میں کہتے رہے میں نےمریم نوازکواپنی آرمی چیف سےمیٹنگ کانہیں بتایاتھاکیونکہ یہ ذاتی میٹنگ تھی۔ جس پر شاہزیب خانزادہ نے کہا کہ اسکا مطلب ہے کہ مریم نواز کو آپکی آرمی چیف سے ملاقات کا ٹی وی ٹکرز سے پتہ چلا ہے جس پر محمد زبیر نے کہا کہ شاید!

واضح رہے کہ گزشتہ روز ایک پروگرام میں ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے رہنما محمد زبیر نے آرمی چیف سے 2 ملاقاتیں کی ہیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے دونوں ملاقاتیں محمد زبیرکی درخواست پرہوئیں اور یہ ملاقاتیں مسلم لیگ (ن) کے قائد نوازشریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز سے متعلق تھیں۔

  • ان پٹواریوں کو شرم نہیں آتی ورنہ یہ سالے ڈوب کے مر جاتے. یہ چاروں ایسے ن لیگی. پیپلزپارٹی مال لانا فضول اور جماعت اسلامی ان ساروں پاکستان کے خلاف نہیں ان کو اللّٰہ ذلیل و خوار کرلیںِ


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >