نیب پر بات ہوئی یا نہیں؟ خواجہ آصف اور احسن اقبال کے بیانات میں تضادات

خواجہ آصف اور احسن اقبال کے بیانات میں تضادات۔۔ خواجہ آصف کا دعویٰ کہ آئی ایس آئی میس میں ہونیوالی میٹنگ میں نیب سے متعلق کوئی بات نہیں ہوئی جبکہ احسن اقبال کا کہنا ہے کہ میٹنگ میں نیب سے متعلق بھی بات ہوئی

کچھ روز قبل آئی ایس آئی کے میس میں مختلف جماعتوں کے پارلیمانی رہنماؤں کی آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی سے ملاقات ہوئی، یہ ملاقات گلگت بلتستان سے متعلق تھی لیکن پارلیمانی رہنماؤں نے مختلف ایشوز ڈسکس کرکے اس موضوع کا رخ موڑدیا، اس میٹنگ میں اپوزیشن نے نیب کی کاروائیوں، الیکشن 2018 میں مبینہ دھاندلی، وزیراعظم عمران خان کے اپوزیشن کے ساتھ روئیے اور دیگر ایشوز کو اٹھایا

خواجہ آصف نے شاہزیب خانزادہ کے پروگرام میں دعویٰ کیا تھا کہ خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ عسکری قیادت سے میٹنگ میں قومی احتساب بیورو (نیب) یا نیب آرڈننس پر کوئی بات نہیں ہوئی۔

جبکہ احسن اقبال کا کہنا ہے کہ عسکری قیادت کیساتھ ملاقات میں سیاستدانوں نے نیب پر بھی بات کی۔ احسن اقبال کے مطابق ایک “نہایت اہم شخصیت” نے کہا سول ادارے سول بیوروکریسی کام نہیں کرتی فیصلے نہیں کر سکتے؛ میں نے اُس تناظر میں نیب کے کردار پر بات کی ۔

احسن اقبال کے مطابق ایک شخصیت نے کہا کہ جو بھی بیوروکریٹ ایک بار نیب کے ہتھے چڑھ جاتا ہے وہ باہر آکر کانوں کو ہاتھ لگاتا ہے کہ میں نے کسی فائل پر دستخط نہیں کرنے۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ یہ وہ موقف ہے جو ہم دے رہے ہیں، صبح شام ٹاک شوز میں ہم یہی بات کررہے ہیں، بطور سویلین میرا کام ہے کہ میں بتاؤں کہ نقص ان لوگوں کے اندر نہیں ہے نقص اس نظام کے اندر ہے۔

اس پر سوشل میڈیا صارفین نے کہا کہ خواجہ آصف کہہ رہے ہیں کہ آرمی قیادت سے میٹنگ میں نیب سے متعلق بات نہیں ہوئی جبکہ احسن اقبال کہہ رہے ہیں کہ بات ہوئی ہے ، ہم کس کی بات پر یقین کریں؟


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >