بلاول جسکی گرفتاری کی مذمت کرتے رہے، اسی نے پلی بارگین کرلی

گزشتہ روز احتساب عدالت نے پیپلز پارٹی کے مرحوم رہنما مخدوم امین فہیم کے بیٹے مخدوم حبیب اللہ المعروف مخدوم جلیل الزماں کو ڈیڑھ کروڑ روپے کی کرپشن سے متعلق کیس میں دس سال کیلئے نااہل قرار دے دیا اور اپنا جرم تسلیم کرتے ہوئے پلی بارگین کرلی جس پر عدالت نے مخدوم جمیل الزمان کو ضمانت پر رہا کردیا۔

مخدوم جمیل الزمان نے نہ صرف اپنی کرپشن کا اعتراف کیا بلکہ پلی بارگین کے طور پر انہوں نے نیب کو ڈیڑھ کروڑ روپے کا پے آرڈر جمع کرا دیا۔

کچھ روز قبل جب مخدوم جمیل الزمان کو نیب نے گرفتار کیا تو پیپلزپارٹی کی طرف سے سخت ردعمل آیا، پیپلزپارٹی رہنماؤں نے مخدوم جمیل الزمان کی گرفتاری کی مذمت کی ۔ مذمت کرنیوالوں میں بلاول بھٹو زرداری بھی تھے۔

بلاول بھٹو زرداری نے مخدوم حبیب اللہ کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا تھا کہ نیب فوری طور پر مخدوم حبیب اللہ کو رہا کرے۔انہوں نے کہا کہ نہ الزام بتایا نہ ثبوت پیش کیا گیا اور مخدوم حبیب اللہ کو گرفتار بھی کرلیا گیا۔

بلاول بھٹو کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے اعلان کے بعد عمران خان نے اپوزیشن سیاست دانوں کے خلاف نیب کو مزید متحرک کردیا۔انہوں نے مزید کہا کہ نام نہاد احتساب کے نام پر انتقامی کارروائیاں عمران خان کی فیس سیونگ نہیں کرسکتیں۔

بلاول جس مخدوم حبیب اللہ کی گرفتاری کو انتقامی کاروائی قرار دیتے رہے، اسی مخدوم حبیب اللہ نے احتساب عدالت میں اپنا جرم تسلیم کرلیا اور ڈیڑھ لاکھ روپے واپس کرکے پلی بارگین کیلئے بھی تیار ہوگئے۔

دلچسپ امر یہ ہے کہ گزشتہ روز جب مخدوم جمیل الزمان نے اعتراف جرم کرنے کے بعد پلی بارگین کی تو پاکستانی میڈیا نے بلاول کے پرانے بیانات کو نہیں چلایا اور پیپلزپارٹی کے کسی رہنما سے یہ سوال نہیں پوچھا کہ آپ تو کہتے تھے کہ انتقامی کاروائی ہوئی ہے لیکن مخدوم جمیل الزمان نے اعتراف جرم کرلیا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >