گرفتاری کے وقت عابدملہی نے اپنے والد سے کیا کہا؟

گرفتاری کے وقت عابدملہی نے اپنے والد سے کیا کہا؟

صحافی رانا عظیم نے کہا کہ عابد کے گرفتاری کےو قت یہ خبرچلی کہ ملزم عابد ملہی فیصل آباد سے گرفتار ہوا ہے۔ سب ٹی وی چینلز نے یہ خبر چلائی لیکن ہمارے چینل کو یہ اعزازحاصل ہے جس نے یہ خبر چلائی کہ ملزم عابد مانگا منڈی سے گرفتار ہوا ہے۔ فیصل آباد سے گرفتاری کی خبر پولیس نے ہی چلوائی تھی۔

صحافی رانا عظیم نے مزید کہا کہ جب ملزم عابد ننکانہ صاحب سے بھاگا تو پولیس نے عابد کو پکڑنے کیلئے جدید طریقے چھوڑ کر روایتی پرانے طریقے اپنائے۔عابد کا ایک کزن ہے جس کا عابد سے بہت زیادہ رابطہ ہے اور عابد کے گھر کے پاس رہتا ہے۔وہ بھی گرفتار تھا، عابد کا چچا خالد بھی گرفتار تھا۔پولیس نے ملزم عابد کے کزن، بھائی، والد، والدہ، بیوی کو گرفتار کیا

رانا عظیم کے مطابق پھر پولیس نے انہیں اعتماد میں لیکر چھوڑدیا جس میں اہم اداروں نے بڑا کردار ادا کیا، انکے موبائلز بھی انکے حوالے کردئیے گئے اور انکی کالز ٹریس کرنا شروع کردی۔عابد سب سے پہلے اپنے کزن کو فون کرتا ہے جس سے پولیس کو پتہ چلتا ہے کہ اسکے پاس نئی سم آگئی ہے۔ جس کے بعد اسے ٹریس کرنا شروع کردیا جاتا ہے۔اس سے پتہ چلتا ہے کہ یہ ننکانہ صاحب سے بھاگ کر تاندلیانوالہ پہنچ گیا ہے۔پولیس وہاں چھاپا مارتی ہے تو یہ پھر بچ نکلتا ہے۔

رانا عظیم نے بتایا کہ عابد اس قدر شاطر تھا کہ فون کرنے کے بعد فون پھینک دیتا تھا۔پھر یہ نئی سم خریدتا ہے اور اپنے والد کو فون کرتا ہے، اسکا والد اسے سمجھاتا ہے کہ پہلے بھی میں نے تمہیں چھڑایا تھا، اسکا عزیز بھی اسے سمجھاتا ہے پھر یہ اپنے چچا سے بھی رابطہ کرتا ہے۔یہ انہیں کہتے ہیں کہ تم آجاؤ ، ہم تمہیں چھڑالیں گے اگر تمہیں پولیس پکڑے گی۔یہ بڑے اعتماد سے رات کے اندھیرے میں آنے کی کوشش کرتا ہے۔

رانا عظیم کے مطابق یہ رات 3 بجے مانگا منڈی کی حدود میں پہنچ جاتا ہے۔یہ جیسے ہی گھر میں داخل ہوتا ہے تو پولیس وہاں پہلے سے موجود ہوتی ہے اور اسے پکڑلیا جاتا ہے۔ میڈیا پر جو یہ چل رہا ہے کہ یہ دو گھنٹے اپنے والد سے بات کرتا رہا یہ بالکل جھوٹ ہے، پولیس اور ادارے کسی صورت یہ رسک نہیں لینا چاہتے تھے، اسے چند ہی منٹ میں گرفتار کرلیا جاتا ہے۔

رانا عظیم نے مزید بتایا کہ عابد ملہی گرفتاری کے 3 یا 4 منٹ بعد ہی اقبال جرم کرلیتا ہے۔جب پولیس اسے گرفتار کرتی ہے تو یہ اپنے والد کو مخاطب کرکے کہتا ہے کہ اب میں پکڑا گیا ہوں، مجھے اب آپ نے چھڑوانا ہے۔اس کیس میں اتنی خوفناک چیزیں سامنے آنیوالی ہیں جس کا آپ تصور نہیں کرسکتے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >