ارطغرل ڈرامہ دکھانا پاکستان کو چھ ارب ڈالرز سے زائد میں کیسے پڑا؟

سعودی شہزادے پاکستانی قیادت سے ناراض، آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی رام نہ کر سکے، ارطغرل پاکستان کو کتنے میں پڑا؟ جانیے تفصیلات رؤف کلاسرا سے

سینئر تجزیہ کار ہ اور کالم نگار رؤف کلاسرا کے مطابق گزشتہ سال اکتوبر یا نومبر کے مہینے سے پاک سعودی تعلقات خراب ہونا شروع ہو گئے تھے، لیکن یہ خبر تب سامنے آئی جب سعودی عرب نے پاکستان سے ایک ارب ڈالر مانگ لیے، جو پاکستان نے فورا سعودی عرب کو واپس کر دیے اور جنوری فروری میں مزید چیزیں سامنے آنا شروع ہو گئیں۔

رؤف کلاسرا نے اپنے وی لاگ میں کہا کہ جو لوگ اندر کی خبر رکھتے ہیں ان کے مطابق یہ بات سامنے آئی تھی کہ جب جنرل اسمبلی سے خطاب کے بعد وزیراعظم عمران خان کا طیارہ خراب ہو گیا تھا تب سعودی شہزادے شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے اپنا نجی طیارہ بھیجا تھا جو راستے میں سے واپس بلا لیا گیا تھا جس پر کچھ لوگوں کی جانب سے انکشاف کیا گیا تھا کہ پاک سعودی تعلقات میں کشیدگی پیدا ہو رہی ہے لیکن اب یہ چیزیں واضح ہونا شروع ہوگئی ہیں کہ پاک سعودی تعلقات میں کشیدگی بڑھ رہی ہے۔

رؤف کلاسرا نے کہا کہ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سعودی عرب نے جو دو ملین ڈالر پاکستان کے پاس رکھوائے تھے وہ انہوں نے پاکستان سے فوری واپس مانگ لیے ہیں، سعودی عرب کے قرض واپس مانگنے سے یہی ثابت ہوتا ہے کہ سعودی عرب نے پاکستان میں آئل ریفائنری لگانے کے لئے جو بیس ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے کی وہ بھی اب نہیں کرے گا، پاک سعودی تعلقات میں پیدا کشیدگی میں شاہ محمود قریشی کے اس بیان کا بھی کردار ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ او آئی سی کے مقابلے میں ہمیں کانسلر بنانا چاہتے ہیں کیونکہ سعودی عرب اور دیگر ركن ممالک کشمیر کے معاملے پر ایکٹیو دکھائی نہیں دیتے۔

انہوں نے کہا کہ حال ہی میں چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ ڈی جی آئی ایس آئی جنرل فیض حمید کے ساتھ سعودی عرب کے دورے پر گئے تھے اس پر یہ خیال کیا جارہا تھا کہ آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی کے دورے کا مقصد اعلی سطح کے ملٹری مذاکرات ہیں لیکن آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی کا مقصد سعودی شہزادے کو رام کرنا تھا اور پاک سعودی تعلقات کو پہلے کی ڈگر پر لانا تھا لیکن وہ ناکام رہے، انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سعودی عرب کے سفیر نے آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی سمیت چودھری شجاعت حسین کے ساتھ ملاقاتیں کی تھیں لیکن شاہ محمود قریشی اور وزیراعظم عمران خان سے ملاقات نہیں کی۔

پاکستان اور سعودی عرب کے تعلقات کی خرابی کی وجہ یہ بھی ہے کہ گزشتہ تین مہینوں سے پاکستان کا جھکاؤ ایران، قطر ،ملیشیا اور ترکی کی جانب سے زیادہ ہے جس پر سعودی عرب کو اعتراض ہے کہ یہ تمام ممالک سعودی عرب کے خلاف ہیں اور آپ ان کے ساتھ ہی تعلقات استوار کر رہے ہیں، سعودی عرب کی جانب سے بیل آؤٹ پیکیجزدئیے گئے ہیں جب کہ ان تمام ممالک کی جانب سے پاکستان کے لیے ایسا کچھ بھی نہیں کیا گیا، اس کے علاوہ یو این او کی جنرل اسمبلی سیشن کے دوران عمران خان نے سب سے زیادہ وقت ترکی کے صدر طیب اردوان کے ساتھ گزارا تھا جو سعودی شہزادے کو ناگوار گزرا۔

رؤف کلاسرا اپنے وی لاگ میں مزید کہنا تھا کہ سعودی عرب کو پاکستان کی قیادت پر اس لیے بھی غصہ تھا کہ انہوں نے ترکی ڈرامہ ارطغرل کو اردو زبان میں تبدیل کرکے پاکستان ٹیلی ویژن پر نشر کیا ہے،جس پر سعودی شہزادے کی جانب سے شدید ردعمل دیا گیا ہے، سعودی عرب میں پہلے یہ سمجھتا تھا کہ وہ پوری مسلم دنیا ان کی طرح دیکھتی ہے کہ وہ کیا فیصلہ کریں گے لیکن آپ پاکستان نے اپنا رخ پر سعودی عرب کی وجہ سے ترکی کی جانب موڑ دیا ہے، جس پر سعودی عرب کی جانب سے شدید ناراضگی کا اظہار کیا جا رہا ہے جو پاکستان کے لیے پریشان کن صورتحال ہے۔

  • اس مہا چوّل گلاسڑا نے ہر تجزیے میں پاک، سعودی تعلقات خراب کرنے ہوتے ہیں پھر ارتغرل ڈرامہ کو اسکی وجہ قرار دینا ہوتا ہے۔ یہ ٹوٹل تجزیہ بار بار سُننے کو مل رہا ہے جب سے یہ ڈرامہ شروع ہوا ہے۔ جانے کیا ذاتی تکلیف ہے اسے

  • پتا نہیں کون اسے سینیر صحافی یا تجزیہ نگار سمجھتا ہے جبکہ اس کی سوچ لیہ مظفر گڑھ سے زیادہ نہیں اگر کوئی تعلقات ڈرامے سے ٹوٹتے ہیں تو ٹوٹ جانا ہی پہتر ہیں یار پاکستان کی سعودی عرب کے لیے قربانیوں کی کوئی قیمت نہیں لیکن ہمارے گلے میں غلامی کا پٹہ ضروری ہے جی ہم ان کی ہاں میں ہاں میلائیں تو بڑی دوستی ورنہ جاؤ پھٹہ کھاؤ واہ یہ دوستی نہیں پاگل غلامی ہے ۔۔۔۔۔ اسے سمجھو اگر تم عزت کرواؤ گے تو کوئی تمھاری عزت کرے گا ورنہ نہیں ۔۔۔۔ قیمت ادا کرکے دوستی نہیں ہوتی غلامی ہوتی ہے

  • جب ہم پیسے لیتے ہیں تو اپنا آپ نہی بیچتے۔ ہم آئی فون کی طرح آئی فقیر ہیں یعنی ماڈرن۔ ہم نے امریکہ سے پیسے لے کر انہیں دس سال تک چکمہ دئیے رکھا تو سعودی کس کھیت کے آلو ہیں۔

  • اس لیہ کے گٹر نے تو حد ہی کر دی ھے اپنے دماغ کے گٹر کی بدبودار کہانیاں روزانہ پٹواریوں کو بیچنے اجاتا ھے آب تو اس کا بیٹا بھی صبحِ آٹھ کر اس کے لعنتی پھٹکار والی شکل پر لعنت ڈال کر کالج جاتا ہوگا۔ بیشرم انسان

  • saudia pakistan mein apni funded terrorism jari rakhna chahta he aur pakistan ko shia sunni conflict ka garh banana chahta hai. its good to be just ok with saudia , friends aise nahin hote. Time to have better relations with afghanistan and iran.

  • The VILLAGE IDIOT…of media Dr(😜) Klasra came up with another bullshit theory…
    As per Donkey Klasra, Pakistan should have please Klasra’s Master MBS… & should not air Turkish Drama. In other words Pakistan should have been guided by MBS wish.
    Then why we would blame US for Do More rhetoric ???

  • Pakistan foreign policy can’t be mortgaged by appeasing Saudi Arabia that failed to toe the interests or leadership of Muslim countries. New regime in Saudia led by MBS is totally controlled by America/Israel determined to dominate in the area. Alliance with the West will be at the expanse of losing Sino- Pak cooperation and subordinate to Indian hegemony. No country should devise Pakistan policies by offering peanuts for short term interest. Its like selling motherland for those not capable protect their own.

  • اس گھلاسڑے کی مت ماری گئی ھے اس کا کوئی علاج نہیں ھے جب کیسی کی مت ماری جائے تو اس میں اس کا کوئی قصور نہیں ھے

  • For few pennies all these anchors are selling their souls including Mr. Klasra. Captions are misleading and false. The way he talks, suggests Pakistan was Fined for 6 Billion. It was simply a loan. Lender asked for his Money, simple! If they will now dictate us what to watch and what not to watch then we should really start review our strategy.

    I personally think it would be an excellent opportunity for Pakistan. Every time any one closed a door for Pakistan, We the people managed to get around it on our own and made self reliance.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >