نوازشریف کی تقریر نشرکرنے کے خلاف درخواست پرچیف جسٹس اطہرمن اللہ نے کیا کہا؟

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ یہ عدالت کسی مفرور کو ریلیف نہیں دے سکتی۔ کیا آپ متاثرہ فریق ہیں؟ چینل یا جو متاثرہ فریق ہے انکو چاہئے کہ وہ متعلقہ فورم پر جائیں

جس پر پٹیشن دائر کرنیوالے صحافیوں کے وکیل سلمان اکرم راجہ کے آج اسلام آباد ہائیکورٹ میں دلائل دیتے ہوئے کہا کہ پٹیشنرز چاہتے ہیں کہ انہیں عوام تک معلومات پہنچانے سے نہ روکا جائے۔ ھم کسی ایک شخص کی بات نہیں کر رہے۔ پیمرا کا آرڈر صحافیوں کیلئے ہے اسلیے وہ متاثرہ فریق ہیں۔

جس میں جسٹس اطہر من اللہ نے دوٹوک الفاظ میں واضح کیا کہ اگر اشتہاری کو ریلیف چاہئے تو وہ پہلے سرنڈر کرے ۔یہ درخواست سادہ نہیں ہے۔ مفرور کی تشریح کریں

گزشتہ روز کچھ صحافیوں نے نوازشریف کی تقریروں پر پابندی کے خلاف پیٹیشن دائر کی تھی۔ پٹیشن دائر کرنیوالوں میں منصورعلی خان، نجم سیٹھی، نسیم زہرہ، ابصار عالم، عاصمہ شیرازی، غریدہ فاروقی ، ضیاء الدین، امبرشمسی اور دیگر نے دائر کی تھی جس میں سیکرٹری اطلاعات، چئیرمین پیمرا کو فریق بنایاتھا۔

جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ آپ نے یہ نہیں سوچا کہ ریلیف جتنے بھی مفرور ہیں سب کیلئے ہوگا۔ آئین کا آرٹیکل 19 پڑھ لیں۔ پیمرا نے آرڈیننس 31 اے کے تحت نوٹیفکیشن جاری ہے۔ پرویز مشرف والے کیس میں یہ ساری چیزیں موجود ہیں۔ مشرف جب مفرور تھا تو عدالت نے ریلیف نہیں دیا

جسٹس اطہر من اللہ نے مزید کہا کہ اگر کسی کو جوڈیشل سسٹم پر اعتماد نہیں اور وہ بھاگ جاتا ہے تو عدالت اسے سرینڈر کرنے تک ریلیف نہیں دیتی۔ نوازشریف کا شناختی کارڈ اور پاسپورٹ بلاک کیاہوا ہے

واضح رہے کہ درخواست گزار صحافیوں کے وکیل سلمان اکرم راجہ ہیں جو پانامہ کیس میں بھی نوازشریف کی وکالت کرتے رہے ہیں۔

  • yah loog ap logo kay itnay baray baray bhand kyn nahi pakrti … sahi bol rahi hay adliya kay ap log azadiya sahaft ki aar main saza yafta mafroor ko faida dana chahtay hain … or bari achi misal di kay dunya main log jailo main ja kar mujrimo kay interview lati hain .. tu ap bhi NS ko jail main anay dain or phir shok say interview lain … ek to budil mafroo hy or dor bath kar idaro ko ankhain dikha raha hy .. yah pakistan main kyn cup lag gaye thi chor kay bachy ko .. sab dushman hain is mulk kay


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >