تحریک انصاف کو اربوں کی اسرائیل،انڈیاکے فنڈنگ الزام میں کتنی سچائی ہے؟

جانیئے تحریک انصاف کو اربوں روپے کی بیرون ممالک سے فنڈنگ کے الزام میں کتنی سچائی ہے؟

مسلم لیگ ن کی نائب صدر اور مرکزی رہنما مریم نواز کی جانب سے حکمران سیاسی جماعت تحریک انصاف پر الزام لگایا جاتا ہے کہ ان کو بیرون ممالک سے یہودی لابی سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے اربوں روپے کی فنڈنگ دی مگر حقیقت یہ ہے کہ یہ پیسے دینے والے بھی پاکستانی تھی جنہوں نے چند سو ڈالر کی فنڈنگ دی تھی۔

اس حوالے سے مسلم لیگ ن کا دعویٰ ہے کہ تحریک انصاف کو اسرائیل اور بھارت سے اربوں روپے آئے مگر حقیقت یہ ہے کہ بیری شنیپ لاء فرم کے مالک آصف چودھری ایک پاکستانی نژاد امریکی ہیں جنہوں نے تحریک انصاف کو 950 ڈالر کی فنڈنگ دی تھی۔

آصف چودھری نے اس کے دستاویزی ثبوت بھی فراہم کیے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک چیک 750 ڈالر کا ہے جبکہ دوسری رسید 200 ڈالر کی ہے جس کی بنیاد پر مسلم لیگ ن تحریک انصاف پر بیرون ملک سے اربوں روپے لا کر پاکستانی الیکشن پر لگانے کا الزام عائد کرتی ہے۔

آصف چودھری نے انکشاف کیا کہ بیری شنیپ وکیل ہیں جو کہ تحریک انصاف پر الزام لگانے والی لیگی قیادت کے ہی امریکا میں کیسز لڑتے ہیں اور الزام عائد کرنے والے مسلم لیگ ن کے تمام رہنما خود ان کے کلائنٹ ہیں۔

انہوں نے لیگی قیادت کو چیلنج کیا کہ وہ ان کے پاس آئیں اور وہاں عدالت میں کیس فائل کریں وہ یہ ثبوت عدالت میں پیش کر کے لیگی الزام کو غلط ثابت کریں گے۔

ویڈیو میں دکھائے گئے دونوں دستاویز ثبوتوں میں دیکھا جا سکتا ہے کیش میمو پر آصف چودھری کا نام درج ہے اور صاف الفاظ میں لکھا ہے کہ یہ پیسے انہوں نے 2012 میں تحریک انصاف کو دیئے ہیں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>