سیف اللہ ابڑو کو 35 کروڑ روپے کے عوض سینیٹ کا ٹکٹ ملا،لیاقت جتوئی کا الزام

سیف اللہ ابڑو کو 35 کروڑ روپے کے عوض سینیٹ کا ٹکٹ ملا،لیاقت جتوئی کا الزام

پاکستان تحریک انصاف سندھ سے تعلق رکھنے والے رہنما لیاقت بلوچ نے الزام عائد کیا ہے کہ سینیٹ انتخابات کیلئے ایک ٹکٹ 35 کروڑ روپے کا فروخت ہوا ہے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے لیاقت بلوچ نے سندھ اسمبلی سے سیف اللہ ابڑو کو سینیٹ انتخابات کیلئے ٹکٹ دیئے جانے سے متعلق اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ تین چار لوگ بیٹھ کرسینیٹ کی ٹکٹوں کافیصلہ کرتے ہیں، سیف اللہ ابڑو سے متعلق بات بھی نہیں کرنا چاہتا ۔

انہوں نے مزید کہا کہ سیف اللہ ابڑو 6 ماہ پہلے تحریک انصاف میں آئے ہیں، ان کا ٹکٹ 35 کروڑ روپے کا بکا ہے، میرا سوال ہے انہیں کس بنیاد اور کون سے میرٹ پر ٹکٹ دیا گیا ہے۔

لیاقت جتوئی کی یہ ویڈیو کلپ پیپلزپارٹی کی رہنما شرمیلا فاروقی نے ٹویٹر پر شیئر کی اور تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ”35 کروڑ، لیاقت بلوچ نام نہاد تبدیلی سرکار کے پول کھول رہے ہیں”۔

واضح رہے کہ سندھ اسمبلی سے پاکستان تحریک انصاف کی قیادت کی جانب سے سیف اللہ ابڑو اور فیصل واوڈا کو سینیٹ انتخابات کیلئے ٹکٹ جاری کرنے سے متعلق سندھ قیادت نے تحفظات کا اظہار کیا تھا اور وزیراعظم کو اس فیصلے پر نظر ثانی کیلئے خط بھی لکھا تھا۔

تاہم بعد میں خبر سامنےآئی کہ وزیراعظم نے ان دونوں رہنماؤں کو ٹکٹ جاری کرنے کے فیصلے سے متعلق پارٹی رہنماؤں کے تحفظات کو دور کردیا ہے اور فیصلے کو برقرار رکھا ہے۔

  • صحیح کہہ رہا ہے۔ عمران خان نے تین سیٹیں پیسوں کے عوض دی ہیں۔ اور انہی پیسوں سے ووٹ خریدے جا رہے ہیں۔
    ایک ارب لیا اور گیا ہے۔

    • اؤے نسواریے ، تیری کونسی پچکاری سیدھی ۔ عمران اسماعیل حرامی بھی تو بونگی خان کا فرنٹ مین ہے ۔ یاد کر تیرے چچا کپی نے بونگی کے بارے میں کیا کہا تھا ، رشوت نہیں لیتا مگر تحفے لے لیتا ہے ۔ 😜۔ ھائے پیلے دندل نسواریو ۔۔۔ نیازی جعلی پٹھان کے احمق نسواری ۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >