پنجاب میں سینیٹ کے بلامقابلہ انتخاب : اندرونی کہانی سامنے آ گئی

میڈیا رپورٹس کے مطابق پنجاب میں سینٹ کا انتخاب کا مقابلہ کیسے ممکن ہوا، معاملے کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی ہے، پنجاب میں سینٹ کے بلا مقابلہ انتخاب میں مرکزی کردار سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی نے ادا کیا ہے۔

خبر رساں ادارے کے مطابق اسپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الہی نے پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن دونوں کی قیادت سے رابطہ کیا، جس پر پیپلزپارٹی نے پنجاب سے اپنے امیدوار کا نام واپس لے لیا۔

مسلم لیگ ن کے قیادت سے اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہی کے رابطوں کے نتیجے میں ن لیگ نے اپنے زائد امیدواروں کے کاغذات نامزدگی واپس لے لیے، جس کی وجہ سے پنجاب میں سینٹ کا انتخاب بلامقابلہ ہوا اور ہر جماعت کو عددی تعداد کے حساب سے سینٹ میں نمائندگی مل گئی۔

خیال رہے کہ چوہدری پرویز الہی کے رابطوں کی وجہ سے پنجاب میں سینٹ کی پر تمام امیدوار بلامقابلہ منتخب ہو گئے ہیں، جس کے بعد پنجاب میں سر کا الیکشن نہیں کروایا جائے گا۔

اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہی کے ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے قائدین سے رابطوں کی بدولت پاکستان تحریک انصاف کو پنجاب میں سینٹ کی 6، مسلم لیگ ن کو 5 اور ق لیگ کو ایک نشست مل گئی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >