نواز شریف کی کونسی ضبط کردہ جائیدادیں نیلام کرنے کا فیصلہ سامنے آ گیا؟

مسلم لیگ ن کے تاحیات قائد اور سابق وزیراعظم نوازشریف کی شیخوپورہ میں ضبط کی گئی جائیدادوں کو ضلعی انتظامیہ کی جانب سے نیلام کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جس کے لیے ڈپٹی کمشنر شیخوپورہ نے بولی کی تاریخ 20 مئی مقرر کردی ہے۔

اُدھر اشرف ملک نامی دعویدار کا کہنا ہے کہ وہ نواز شریف سے شیخوپورہ میں موجود88 کنال اراضی خرید چکا ہے اور اس کے لیے 75 ملین روپے بھی ادا کر دیئے ہیں۔

اشرف ملک نے ڈی سی شیخوپورہ کی جانب سے بولی کیلئے مقرر کردہ 20 مئی کی تاریخ کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں چینلج کر دیا ہے۔

درخواستگزار کا درخواست میں موقف ہے کہ وہ نواز شریف سے یہ اراضی خرید کر اس کی رقم کی ادائیگی بھی کر چکا ہے تاہم ان کی گرفتاری کے باعث سیل ڈیڈ پر عملدرآمد یا کوئی بیان نہیں ہو سکے۔

اشرف ملک کا کہنا ہے کہ سیل ڈیڈ پر عملدرآمد کے لیے اس نے سول عدالت سے بھی رجوع کر رکھا ہے، درخواستگزار نے استدعا کی ہے کہ ڈی سی شیخوپورہ کو 88 کنال اراضی کی نیلامی سے روکا جائے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >