میں نے وضاحت صحافتی تنظیم کو دی ہے جیو یا اسٹیبلیشمنٹ کو نہیں، حامد میر

میں نے وضاحت صحافتی تنظیم کو دی ہے جیو یا اسٹیبلیشمنٹ کو نہیں۔ حامد میر اپنے معافی نامے سے مکر گئے؟

گزشتہ روز سینئر صحافی و اینکر پرسن حامد میر نے گزشتہ دنوں دیے گئے فوج مخالف بیان پر معذرت کرلی ہے، انہوں نے کہا کہ میرے الفاظ سے پہنچنے والی تکلیف پر میں تہہ دل سے معذرت کرتا ہوں۔

تفصیلات کے مطابق راولپنڈی اسلام آبادیونین آف جرنلسٹس (آر آئی یو جے)کی جانب سے جاری کردہ ایک مراسلے میں لکھا گیا ہے کہ سینئر صحافی و اینکر پرسن نے گزشتہ دنوں اپنی ایک تقریر میں ریاستی اداروں کو تنقید کا نشانہ بنانے پر معذرت کرلی ہے۔

مراسلے کے مطابق آر آئی یو جے اور نیشنل پریس کلب کی کمیٹی نے حامد میر سے 28 مئی کی تقریر کے حوالے سے ایک ملاقات کی، ملاقات کے دوران حامد میر نے کمیٹی کے سامنے اپنی تقریر کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ میں نے اپنی تقریر میں کسی کا نام نہیں لیا نہ ہی فوج سے میری کوئی لڑائی ہے۔میں فوج کا بحیثیت ادارہ احترام کرتا ہوں، میری تقریر کا مقصد ہر گز کسی کی دل آزاری یا کسی کے جذبات کو ٹھیس پہنچانا نہیں تھا”۔اس معافی نامے پر حماد میر کے دستخط ہی موجود تھے ۔

لیکن آج حامد میر نے اپنے معافی نامے پر وضاحت کی اور کہا کہ اسلام آبادیونین آف جرنلسٹس (آر آئی یو جے)کی جانب سے جاری کردہ یہ وضاحتی بیان صحافتی تنظیموں کا ہے اور اُن کی وضاحت اسٹیبلیشمنٹ اور جیو کی انتظامیہ کے لیے نہیں بلکہ صحافتی تنظیموں کے لیے ہے۔

حامد میر کا کہنا تھا کہ جب پاکستان کے مختلف شہروں میں اُن کے خلاف درخواستیں جمع ہونی شروع ہوئیں تو اس وقت صحافتی تنظیموں نے کمیٹی بنائی اور انھوں نے پاکستان بار کونسل کے ساتھ مل کر فیصلہ کیا کہ وہ اُن کا دفاع کریں گے۔

حامد میر نے کہا تھا کہ انکی اسد طور پر حمایت میں کئے گئے احتجاج میں تقریر کے بعد انکے خلاف مختلف لوگ ایف آئی آرز درج کروارہے تھےاور یہ بیان انکا نہیں صحافتی تنظیموں کی جانب سے بنائی گئی کمیٹی نے جاری کیا ہے

سینئر صحافی نے کہا ’میں نے اپنی وضاحت میں یہ ضرور کہا ہے کہ اگر کسی کی دل آزاری ہوئی ہے یا جذبات کو ٹھیس پہنچی ہے تو اس پر میں معذرت خواہ ہوں۔

اپنے ایک ٹوئٹر پیغام میں حامد میر نے کہا کہ شکریہ ، صحافیوں پر حملوں کا سلسلہ رکنا چاہئیے ، پاکستان میں قانون کی بالا دستی قائم ہونی چاہئیے ، صحافی تنظیمیں اس معاملے پر خاموشی اختیار نہیں کر سکتیں۔

واضح رہے کہ حامد میر کچھ دن سے شدید تنقید کی زد میں ہیں جس کی وجہ انکے فوج کے خلاف سخت بیانات ہیں جو انہوں نے اسد طور پر تشدد کے بعد انکی حمایت میں ہونیوالے ایک احتجاج کے دوران استعمال کئے تھے۔

اس مظاہرے میں حامد میر نے عسکری اداروں کے انتہائی نازیبا الفاظ استعمال کئے تھے اور اداروں کو دھمکی دی تھی کہ کہ آئندہ کسی صحافی پر ایسے تشدد نہیں ہونا چاہیے ورنہ وہ ’گھر کی باتیں بتانے پر مجبور ہوں گے

  • یعنی یہ گشتی زاد حامد میر جعفر را کا پالتو کتا اسٹبلشمنٹ اور جیو کو ۔۔۔۔ پر لکھتا ہے
    کیونکہ وہ اسی کے مستحق ہیں
    They deserved it and they asked for it

  • اس حرامزادے کے سر اور تشریف پر لتر لگانے کے ساتھ چنونوں کی دوائی دیکر حکیمی جلاب دیں تاکہ اوپر سے نیچے تک مکمل صفائی ہو اور ذہنی غلاظت صاف ہو .

  • اس حرامزادے کے سر اور تشریف پر لتر لگانے کے ساتھ چنونوں کی دوائی دیکر حکیمی جلاب دیں تاکہ اوپر سے نیچے تک مکمل صفائی ہو اور ذہنی خباثت بمعہ جسمانی غلاظت صاف ہو .


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >