ملک میں گدھوں کی تعداد میں اضافے کے ذمہ دار عمران خان ہیں:مولانا فضل الرحمان

جمیعت علمااسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے لاہور میڈیا سےگفتگو کے دوران کہا کہ ہمارے ملک کا عام آدمی مہنگائی سے پسا ہوا ہے، معاشی بدحالی کا شکار ہے اور سکھ کا سانس نہیں لے سکتا، مگر یہاں ایک طبقہ اپنی خوشحالی کو ملک کی خوشحالی سمجھتا ہے، یہ ایک چیلنج ہے جس کا ہمیں مقابلہ کرنا ہے۔

سربراہ جےیوآئی نے کہا کہ مدرسے بنانے ہیں قرآن پڑھنا ہے یا مسجد بنانی ہے تو ایف اے ٹی ایف سے اجازت لینا پڑے گی، حکومت کو یہ قانون پاس نہیں کرنے دیں گے، حکومت کو قانون واپس لینا پڑے گا، ہمیں آزاد فضاؤں میں سانس لینی ہے یہ غلامی قبول نہیں کرسکتے کیونکہ غلامی میں یہ ہوتا ہے کہ سب کچھ غیروں کے حوالے کردیں۔

انہوں نے وزیراعظم عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ معیشت جمود کا شکار ہے ان لوگوں میں یہ صلاحیت ہی نہیں کہ معیشت کو بہتر کرسکیں، کبھی لاشوں کے بدلے اور کبھی دہشت گردی کے بدلے پیسے ملتے ہیں، حکومت معیشت ٹھیک نہیں کرسکتی۔ مولانا کا مزید کہنا تھا کہ میں نے 40 سال پارلیمنٹ میں گزارے ہیں بجٹ کو بہت اچھی طرح سمجھتا ہوں۔

مولانا فضل الرحمان نے عمران خان سے متعلق کہا کہ ملک میں گدھوں کی تعداد میں اضافے کے ذمہ دار بھی وہی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو کے بیان پر تشویش ہے مگر اس طرح شکوے شکایتیں کرنے سے اپوزیشن کا شیرازہ بکھر جائے گا۔

  • حالانکہ اس پہ زیبروں کے مالک یعنی مولانہ اور گدھوں کے لیڈر کو خوش ہونا چاہیے کہ عمران اپنوں کیساتھ ساتھ غیروں کا بھی کتنا خیال رکھتا ہے؟

    • سور اور سور کےبچوں کی تعداد میں اضافے کا زمہ دار خنزیری نسل کا کتا پاکستان کی تشکیل کو گناہ بھونکنے والا نطفہ حرام خنزیر الشیطان آگے پیچھے اوپر نیچے کا گے اور ممیسا اور مودی کا پالتو کتا ہے
      کیونکہ نا یہ خود کنٹرا سپٹ استعمال کرتا ہے نا ہی اپنے بوائے فرینڈز گل خان وغیرہ کو کراتا ہے

  • فضل الرحمن ! چوروں کی دلالی اور وکالت کا انجام ، رسوائی + رسوائی +رسوائی . اگر 11 چور اسلام آباد کے 22 نمبر بنگلے میں پچھلے 33 سال تک سالانہ 44 لاکھ کا دہی کا شربت اپنے ڈاکو امام کے ساتھ با جماعت پئیں تواگلے 55 سال تک دماغ صرف کرسی کرسی کرتا ہے . ابھی اگلے 11 سال مزید نشہ نہیں اترے گا ..اگر یہی حالت رہی تو 2023 میں کیا ہو گا =پھرتے ہیں میر خوار کوئی پوچھتا نہیں – اس عاشقی میں عزت سادات بھی گئی .


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >