حکومت نے کتنے ارب کے ٹیکسز لگائے؟ بلاول کی قلابازیاں

بلاول بھٹو زرداری کے یوٹرن۔۔ پہلے پونے 400 ارب کے ٹیکس لگانے کا دعویٰ کیا اور آج 700 ارب کے ٹیکسز کا دعویٰ کردیا

تفصیلات کے مطابق پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے دعویٰ کیا ہے کہ عمران خان نے بجٹ میں 700 ارب روپے کے ٹیکس لگائے جبکہ کچھ روز قبل ہی بلاول نے الزام لگایا تھا کہ حکومت نے پونے 400 ارب روپے سے زائد کے ٹیکسز لگادئیے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ عمران خان نے کہا کہ عزیز ہم وطنو! ملک ترقی کر گیا ہے لیکن 25 فیصد مہنگائی تبدیلی کا اصل چہرہ ہے۔

بلاول نے دعویٰ کیا کہ ملک میں ہر 3 میں سے 1 بچہ غذائی قلت کا شکار ہے۔عمران خان نے ڈیری مصنوعات پر 17 فیصد سیلز ٹیکس لگا دیا۔آٹا، چینی ، گھی، تیل مہنگا کردیا۔

بلاول بھٹو زرداری نے دعویٰ کیا کہ حکومت بجٹ کے حقائق چھپانے کے لیے اپوزیشن کی آواز دبا رہی ہے، عمران خان گالم گلوچ اور بدتمیزی کرا کر بچ نہیں پائیں گے، ہم انکا کچا چٹھا عوام کے سامنے لائیں گے۔

کچھ روز قبل ہی بلاول نے دعویٰ کیا تھا کہ بجٹ میں عوام پر تقریباً پونے چار سو ارب روپے سے زائد کے نئے ٹیکس لگائے گئے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ عمران خان کی حکومت نے عام آدمی کے استعمال کی کوئی ایسی شے نہیں چھوڑی جس پر ٹیکس نہ لگایا ہو۔

بلاول کا مزید کہنا تھا کہ پی ٹی آئی بجٹ میں ٹیکسوں کے نام پر عوام کی جیبوں پر ڈاکے کو مسترد کرتا ہوں، عمران خان کے عوام دشمن معاشی اقدامات کو بے نقاب کرتا رہوں گا۔

واضح رہے کہ پیپلزپارٹی کے رہنما ٹاک شوز میں یہ شدومد سے یہ دعویٰ کرتے رہے کہ بجٹ میں 383 ارب کے نئے ٹیکسز لگائے گئے ہیں جبکہ سلیم مانڈوی والا نے 25 ارب کے ٹیکسز لگانے کا دعویٰ کیا تھا۔

  • لاڑکانہ میں سو فیصد بچے غذائی قلت کا شکار ہیں مگر بنٹی کو اپنے گھر کا نہیں پتہ تو لاڑکانہ کا کیا پتہ ہو گا


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >