اسلام آباد میں بارش زیادہ نہیں ہوئی لیکن سیکٹر ای الیون ڈوب گیا،وجہ کیا بنی؟

اسلام آباد میں بارش زیادہ نہیں ہوئی لیکن سیکٹر ای الیون ڈوب گیا،وجہ کیا بنی؟

کل سے یہ دعویٰ کیا جارہا ہے کہ اسلام آباد کا سیکٹر ای الیون اس وجہ سے ڈوبا ہے کہ وہاں کلاؤڈ برسٹ ہوا ہے جس کی وجہ سے بارش بہت زیادہ ہوئی ہے۔اس پرسوشل میڈیا پر یہ تنازع شروع ہو گیا ہے کہ آیا اتنا نقصان انتظامیہ کی جانب سے برساتی نالوں کی بروقت صفائی نہ کرنے کے نتیجے میں ہوا یا اچانک کلاؤڈ برسٹ اس کی وجہ بنا۔

منگل کی رات اور گزشتہ روز مسلسل جاری رہنے والی بارش کے نتیجے میں کئی نشیبی علاقے زیر آب آ گئے ہیں، سڑکوں پر پانی جمع ہے اور بعض جگہوں پر گھروں میں بھی پانی داخل ہو گیا ہے۔

ضلعی انتظامیہ کے مطابق اسلام آباد میں سیکٹر ای الیون کے ایک گھر کی بیسمنٹ میں پانی داخل ہو جانے کی وجہ سے ماں اور بچہ جاں بحق ہوگئے۔گزشتہ روز اسلام آباد کے ای الیون سیکٹر میں سیلاب کی کیفیت تھی اور بعض مقامات پر تو گاڑیاں بھی سیلانی ریلے میں تیرتی نظر آ رہی تھیں۔

اس حوالے سے ڈپٹی کمشنر اسلام آباد نے ایک ٹوئٹ میں دعویٰ کیا کہ اسلام آباد میں کلاؤڈ برسٹ کی وجہ سے شہر کے مختلف علاقوں میں سیلاب آیا ہے۔

اپنے آفیشل اکاؤنٹ سے ٹویٹ کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر اسلام آباد حمزہ شفقات نے لکھا کہ’اسلام آباد میں بادل پھٹنے کے باعث مختلف علاقوں میں سیلاب آگیا ہے۔ ٹیمیں نالوں اور سڑکوں کو صاف کررہی ہیں۔ امید ہے کہ ہم ایک گھنٹے میں سب کچھ کلئیر کردیں گے۔

محکمہ موسمیات نے ڈپٹی کمشنر اور ضلعی انتظامیہ کے دعوے کو رد کردیا ، محجمہ موسمیات کا کہنا ہےکہ اسلام آباد میں جس علاقے میں سیلابی صورتحال ہوئی وہ کلاؤڈ برسٹ کا نتیجہ نہیں، متاثرہ علاقے میں ڈیڑھ گھنٹے میں 103 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی، نشیبی علاقے میں پہاڑوں سے پانی آنے اور نکاسی مناسب نہ ہونے سے سیلابی صورتحال ہوتی ہے،اُدھر سیدپور میں 123ملی میٹر بارش ہوئی لیکن نکاسی درست ہونے سےسیلابی صورتحال نہیں ہوئی۔

آخر یہ معاملہ کیا ہوا؟123 ملی میٹر بارش میں کیسے ممکن ہے کہ سیکٹرای الیون ڈوب گیا؟ گاڑیاں پانی پر تیرنے لگیں؟ سیلابی صورتحال پیدا ہوگئی؟ آخر یہ سب سیکٹر ای الیون میں ہی کیوں ہوا؟ اینکر عمران خان نے اسکی وجہ بتادی

جی این این کے صحافی اینکر عمران خان نے یہ دعوے مسترد کردئیے کہ اسلام آباد میں ای الیون کلاؤڈ برسٹ ہونے کی وجہ سے ڈوبا۔۔ اینکر کا دعویٰ ہے کہ اسلام آباد میں بارش ضرور ہوئی لیکن اتنی زیادہ نہیں ہوئی کہ اسلام آباد ڈوب جائے اورسیلاب آجائے اور نہ ہی کلاؤڈ برسٹ ہوا ہے۔

اینکر عمران خان کا کہنا تھا کہ اس سیکٹر ای الیون کے پیچھے پہاڑی علاقہ ہے، اس پہاڑی علاقے سے جب بھی بارش ہوتی ہے تو پانی نیچے فلو کرتے ہوئے نیچے میدان کی طرف آتا ہے۔ یہ پانی کا نیچرل فلو ہے، یہاں ایک پانی کا قدرتی نالہ موجود ہے، اس نالے کے ذریعے پانی گزر کر آگے چلاجاتا تھا اور یہ پانی اس طریقے سے مینیج ہوجاتا تھا۔

عمران ریاض کا کہنا تھا کہ یہ کام شروع ہوتا ہے پرویز مشرف دور کے بعد پیپلزپارٹی اور ن لیگ کے دور میں بھی، انجم عقیل نامی ایک ن لیگی سابق ایم این اے تھا جو ایک قبضہ مافیا ہے۔ اس پر سیکٹر ای الیون کے معاملے پر ایک کیس بھی چل رہا ہے ۔ اس نے گولڑہ والی فیملی کیساتھ ، کچھ پولیس فاؤنڈیشن کے ساتھ جعلی معاہدہ کیا تھا اور یہاں تجاوزات قائم کی تھیں۔

اینکر نے مزید کہا کہ جس نالے کے ذریعے سے پانی گزرنا تھا، اس نالے کے فلو کو ہاؤسنگ سوسائٹیز، بلڈنگز، پلازے بناکر روک دیا گیا ہے اور وہاں پہ ایک پتلی سی نالی بنادی ہے۔ پانی جب بھی آئے گا اپنے بہاؤ پہ آئے گا، پانی نے اپنا رستہ نہیں بدلا، پانی صدیوں سے جن رستوں سے آرہا ہے انہی رستوں سے گزررہا ہے ۔

ہوا یہ ہے کہ انسانوں نے پانی کے رستے میں رکاوٹیں ڈال دی ہیں، وہاں پلاٹنگ کی گئی، چائنہ کٹنگ کی گئی، بیچنے والے بھاگ گئے، اس میپ کو آپ دیکھیں کہ پہلے نالہ آرہا ہے اور آگے چھوٹی سی نالی بنادی۔ یہی وجہ تھی کہ آپکو پانی کی سیلابی صورتحال نظر آرہی ہے۔

اینکر عمران خان کا کہنا تھا کہ بیچنے والے تو بھاگ گئے، جنہوں نے خریدی ، انہوں نے کروڑوں روپے لگائے، اب اسکا یہی حل ہے کہ جو کچھ بنایا گیا ہے وہ گرانا پڑے گا ورنہ ہر سال یہی سیلابی صورتحال پید اہوگی۔

  • ey merey Beghrat Pakistanio…….apna nahi tu apne aaney wali nassal ka souch lou……..kion apney ghar ki tabahee kertey hu……yahan Har bunda Malik Riyaz hey…..har bundaa Zaedari aur Nawaz hey…..sub courrupt hein……kio topi pehn ker loot raha hey aur koi badmaashi ker ke…………


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >