وفاقی حکومت کا شہباز شریف کو ڈھیل دینے کا پلان؟

وزیرداخلہ شیخ رشید نے قومی اسمبلی میں قائدِ حزبِ اختلاف شہباز شریف کی ماضی بھلا کر آگے بڑھنے کی پیشکش پر جواب دے دیا۔ انہوں نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران شہباز شریف کی بات کا جواب دیتے ہوئے الیکٹرانک ووٹنگ مشین سے بات چیت کا آغاز کرنے کا مشورہ دے دیا۔

وزیرداخلہ نے کہا کہ اقتدار کے بھوکوں کے جمعہ بازار کو پذیرائی نہیں مل رہی، عمران خان کو ن لیگ یا پیپلزپارٹی سے کوئی خطرہ نہیں۔ ن لیگ اور ش لیگ کے درمیان مفاہمت اور مزاحمت کی جنگ ہے۔ یہ اپنی انگلیاں خود کاٹیں گے۔ شہبازشریف اگر بات کرنا چاہیں تو حکومت کے دروازے کھلے ہیں، وہ ماضی بھلا کر آئیں، سیاست میں دروازے بند نہیں ہوتے۔

یاد رہے کہ اپوزیشن لیڈر نے گزشتہ روز نجی ٹی وی کے پروگرام جرگہ میں کہا تھا کہ سب کو ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھتے ہوئے آگے بڑھنا چاہیے، تاکہ عوام کی مشکلات کا مداوا کیا جاسکے۔

وفاقی وزیر داخلہ نے مزید کہا کہ پاکستان نے افغان سفیر کی بیٹی کے اغوا سے متعلق تحقیقات مکمل کرلی ہے، اس کیس میں افغان تحقیقاتی ٹیم آئی ہے، ڈپلو میٹک انکلیو کو محفوظ اور جدید بنانے کے لیے ہدایات کی ہیں، سفارتی علاقے میں 190 کیمرے لگائے جائیں گے۔ پاک فوج نے افغان سرحد پر باڑ لگارکھی ہے، پاکستان میں افغان مہاجرین نہیں آرہے اور نہ ہی طالبان موجود ہیں، 108 لوگ بلوچستان کے راستے پاکستان آئے ہیں، پاکستان آنے والے وہی لوگ ہیں جو یہاں سے گئے تھے۔

شیخ رشید نے کہا کہ نورمقدم کیس کے تمام ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے، ملزم ظاہر جعفر کے والد اور ڈرائیور کو بھی اندر کیا ہے، مجھے امید ہے ظاہر جعفر کو سزائے موت ہوگی۔ میں اپنی زندگی میں جتنی کوشش کرسکتا تھا وہ کی ہے، اب میں اس کو پولیس مقابلے میں تو نہیں مرواسکتا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >