پنجاب کے تمام نجی اسکولوں کو فیس میں 20 فیصد کمی کرنے کی ہدایت

تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے خطرہ کے پیش نظر پنجاب حکومت کی جانب سے تمام نجی و سرکاری سکولوں کو بند کرنے کے احکامات جاری کیے گئے تھے۔ نجی سکولوں کی بندش کے باوجود نجی سکولوں کے مالکان کی جانب سے والدین سے مسلسل پوری فیس وصولی کی ڈیمانڈ کی جاتی رہی ہے جس پر والدین تذبذب کا شکار تھے۔ تاہم وزیر تعلیم نے پنجاب کے تمام نجی اسکولوں کو فیس میں 20 فیصد کمی کرنے کی ہدایت کی ہے۔

پنجاب کے وزیر تعلیم مراد راس نے تمام نجی سکولوں کے مالکان کو کرونا وائرس کے باعث حالیہ بندش کو گرمیوں کی تعطیلات قرار دے کر بچوں کے والدین سے وصول کی جانے والی فیس میں بیس فیصد کمی کرنے کی ہدایت کی ہے۔ وزیر تعلیم نے کہا کہ نجی اسکولوں کو اپریل اور مئی کی اپنی فیسوں میں سے 20 فیصد کمی کرنی چاہیے تاکہ والدین کی پریشانی کو دور کیا جاسکے۔

اس سے قبل وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے مراد راس کی سربراہی میں دو رکنی ٹیم تشکیل دی تھی جس میں پنجاب کے وزیر قانون راجہ بشارت بھی شامل تھے جس کو نجی سکولوں کے مالکان کے ساتھ ملاقات کرکے کورونا وائرس کی وبا کے دوران سکولوں کی بندش پر فیس سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کرنے کا ٹاسک سونپا گیا تھا۔

بعد ازاں وزیر تعلیم مراد راس کی سربراہی میں بننے والی دو رکنی ٹیم نے منگل کے روز نجی اسکول کے مالکان سے ملاقات کی جس میں سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے سیکریٹری شہریار سلطان، ضلعی محکمہ تعلیم کے پرویز اختر اور نجی سکولوں کے مالکان شریک ہوئے جس میں نجی سکولوں کو فیس میں کمی کرنے کے ساتھ ساتھ نجی سکول مالکان کو اس بات کی بھی یقین دہانی کرانے کا کہا کہ لاک ڈاؤن کے دوران کسی بھی ٹیچر کو نوکری سے نہیں نکالا جائے گا جبکہ انکو تنخواہ بھی دی جائے گی۔

دوسری جانب بدھ کے روز لاہور ہائی کورٹ میں کورونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر بند نجی سکولوں کے مالکان کی طرف سے سکولوں کی بندش پر فیسوں کی وصولی کو چیلنج کیا گیا ہے۔ لاہور ہائی کورٹ میں دائر درخواست میں کہا گیا ہے کہ لاک ڈاؤن کے باوجود نجی سکولوں کی جانب سے فیسوں کی وصولی عدالت کے احکامات کے منافی ہے۔

لاہور ہائی کورٹ میں دائر درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ بندش کے باوجود فیس طلب کرنے والے سکول توہین عدالت کر رہے ہیں۔ لہذا استدعا ہے کہ لاہور ہائی کورٹ درخواست کو منظور کرتے ہوئے اس پر فیصلہ سنائے۔

مزید برآں پنجاب حکام نے صوبے بھر کی یونیورسٹیوں میں تعلیمی سیشنوں اور کلاسوں کے انعقاد کے لئے آن لائن نظام متعارف کرانے کے لئے بھی تیاریوں کا آغاز کردیا ہے۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More