چئیرمین ایچ ای سی کو وقت سے پہلے عہدے سے فارغ کرنے کی اصل کہانی

وفاقی حکومت نے چیئرمین ایچ ای سی ڈاکٹر طارق بنوری کو عہدے سے برطرف کر دیا

وفاقی حکومت نے چیئرمین ایچ ای سی ڈاکٹر طارق بنوری کو عہدے سے برطرف کر دیا

چیئرمین ایچ ای سی ڈاکٹر طارق بنوری کو ان کی مدت ملازمت کی تکمیل سے قبل ہی عہدے سے برطرف کر دیا گیا وفاقی حکومت نے اس ضمن میں باقاعدہ نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا۔

نیب نے بھی ڈاکٹر طارق بنوری کے خلاف بد عنوانیوں، بےقاعدگیوں، بدانتظامی اور کنسلٹنٹس کی تعیناتی پر تحقیقات شروع کر رکھی تھیں۔ وہ گزشتہ تین سال سے ایڈہاک بنیادوں پر ایچ ای سی چلا رہے تھے۔

ڈاکٹر طارق بنوری کی چار سالہ مدت ملازمت آئندہ برس مئی میں مکمل ہونا تھی تاہم ان کے خلاف وسیع پیمانے پر شکایت تھیں، ڈاکٹر طارق بنوری کی تعیناتی کے دوران نہ تو میرٹ پر مستقل ای ڈی تعینات کیا گیا نہ ہی ریجنل ڈائریکٹرز تعینات ہوئے۔ بھاری تنخواہوں پر بڑی تعداد میں کنسلٹنٹ بھرتی کیے گئے جن میں بعض نا صرف ریٹائر بلکہ تعلیمی لحاظ سے بھی محض گریجویٹ تھے۔

ڈاکٹر طارق بنوری کو وفاقی حکومت کی جانب سے آرڈیننس جاری کر کے مدت ملازمت کم کر کے فارغ کردیا گیا۔ اس حوالے سے حکومتی ذرائع کا کہنا ہے کہ کسی سینئر ممبر بورڈ یا ای ڈی کو قائم مقام چیئرمین ایچ ای سی مقرر کیا جائے گا۔

بعد ازاں چیئرمین ایچ ای سی کے لیے باقاعدہ اشتہار جاری کر کے مستقل بنیادوں پر تعینات عمل میں لائی جائے گی۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>