اسلام آباد میں سیف سٹی کے کیمروں کی مدد سے ای چالان سسٹم کا باضابطہ اجراء

پریس ریلیز , وفاقی دارالحکومت میں سیف سٹی کے کیمروں کی مدد سے ای چالان سسٹم کا باضابطہ اجراء۔ تفصیلات کے مطابق ای چالان کے افتتاح کے حوالے سے سیف سٹی اسلام آبا د میں ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا ،

جس کے مہمان خصوصی آئی جی اسلام آباد قاضی جمیل الرحمان نے شہری کو چالان جاری کرکے ای چالان سسٹم کا باضابطہ افتتاح کیا، ڈی جی سیف سٹی محمد سلیم نے آئی جی اسلام آباد کو ای چالان سسٹم کے طریقہ کارکے بارے میں بریف کیا ،

آئی جی اسلام آباد نے اس موقع پر کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے ویژن کے مطابق وفاقی دارالحکومت کو جدید ٹیکنالوجی سے آراستہ کرتے ہوئے ای چالان کی طرف جارہے ہیں، جدید دور کا تقاضا ہے کہ ٹیکنالوجی کے استعمال کو فروغ دیا جائے۔

ای چالان سسٹم کے اجراءکو ایک بڑی تبدیلی قرار دیتے ہوئے انھوں نے مزید کہا کہ یہ اقدام جدیدپولیسنگ کی طرف اہم سنگ میل کی حیثیت ثابت ہوگا ، اس نظام کے تحت ٹریفک قوانین کے نفاذ اور مانیٹرنگ کا عمل بہتر ہوگا ای چالان نظام کے تحت ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والاکوئی بھی شخص کیمرے کی آنکھ سے نہیں بچ سکتا،اس سسٹم کو براہ راست سیف سٹی، ایکسائز اینڈ ٹیکیسیشن آفس کے ساتھ منسلک کیا گیا ہے اس سلسلے میں باقاعدہ طور پر تین ماہ کی ایک خصوصی مہم کے ذریعے شہریوں کو آگاہ کیا گیا۔

انھوں نے مزید کہااس جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے قانون کے شکنجے میں آئیں گے سگنلز پر نصب کیمرے ٹریفک پولیس کی آنکھوں کا کردار ادا کرتے ہوئے ریڈ سگنل ،زیبرا کراسنگ و دیگر قوانین کی خلاف ورزیوں کی فوری نشاندہی کریں گے جس پر فوری کارروائی کی جائے گی ای چالان کے تحت چالان گاڑی یا موٹرسائیکل کے مالک ۔ کے گھر موصول ہوگا

جاری شدہ ای چالان کا جرمانہ متعلقہ شخص کو دس دن کے اندر جمع کرانا ہوگا بصورت دیگرگاڑی یا موٹر سائیکل متعلقہ تھانہ میں بند کر دی جائے گی شہری جرمانہ کی رقم بذریعہ جے ایس بینک، موبائل اکاﺅنٹس،جاز کیش سمیت دیگر اکاؤنٹ میں جمع کرا سکتے ہیں، ای چالان سسٹم کے متعارف کروائے جانے کا مقصد ٹریفک قوانین کی پاسداری کو یقینی بنانا ہے،اس موقع پر ڈی آئی جی آپریشنز،ڈی آئی جی سیکیورٹی،ایس ایس پی ٹریفک،ڈائریکٹر آئی ٹی ،و دیگر سینئیر پولیس افسران نے بھی شرکت کی۔

پی آراواسلام آباد پولیس


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>