صارفین کی شدید تنقید کام کر گئی ،واٹس ایپ کی تبدیلی پالیسی مؤخر

صارفین کی تنقید اور متبادل ایپس پراکاؤنٹس،واٹس ایپ کی تبدیلی پالیسی مؤخر

واٹس ایپ انتظامیہ نے اپنے صارفین کو مطمئن کرنے اور انہیں سنگنل اور ٹیلی گرام سمیت دیگر متبادل اور رائیول ایپس پر اکاؤنٹس بنانےسے روکنے کیلئے بالاخر گھٹنے ٹیک ہی دییے، واٹس ایپ نے صارفین کے ڈیٹا شیئرنگ کے معاملے سے متعلق تحفظات اور خدشات دور کرنے کیلئے اہم اقدام اٹھالیا، اب واٹس ایپ کی نئی پرائیوٹ میں تبدیلی کا فیصلے میں پندرہ مئی تک توسیع کردی گئی ہے، واٹس نے ایپ نے صارفدین کو آٹھ فروری تک پالیسی میں تبدیلی اپنانے کی ڈیڈ لائن دی تھی۔

واٹس ایپ انتظامیہ کا ٹوئتٹس کہنا ہے کہ صارفین کے نئی پالیسی سےمتعلق تحفظات کے باعث تبدیلی موخر فیصلہ کیا گیا ہے،پالیسی پر نظر ثانی کیلئے صارفین کی رائے بھی شامل کی جائے گی،واٹس ایپ نے کہا کہ ہم سے رابطہ کرنے والے ہر فرد کا شکریہ، ہم واٹس ایپ صارفین سے براہِ راست رابطہ کرکے غلط فہمی کا ازالہ کریں گے، 8 فروری کو کسی کے بھی اکاؤنٹ ختم یا معطل نہیں کئے جائیں گے۔ مئی میں ہم اپنے کاروباری منصوبے کو دوبارہ پیش کریں گے، ہم چاہتے ہیں کہ صارفین کو ہماری شرائط جاننے اور جائزہ لینے کا مناسب وقت مل جائے، ہم یقین دلاتے ہیں کہ ہم کوئی اکاؤنٹ ڈیلیٹ نہیں کریں گے۔

پالیسی کی دستاویز کو مسترد کرتے ہوئے صارفین نے اپنا ڈیٹا غیرمحفوظ ہونے کے باعث سگنل اور ٹیلی گرام پر اکاؤنٹس بنانا شروع کردیے، ایپل اور ایپ اسٹور پر سرِ فہرست آگئی تھیں جبکہ بڑی تعداد میں اکاؤنٹس بنانے پر یوززر کیلئے اکاؤنٹ بنانا بھی مشکل ہورہا ہے، جس پر ایپس انتظامیہ کا کہنا ہے کہ وہ جلد اس مسئلے پر بھی قابو پالیں گے، ان ایپس کی وجہ سے واٹس کے صارفین میں روز بروز کمی ہوتی جارہی ہے، جس پر واٹس ایپ انتظامیہ نے تبدیلی موخر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

واٹس ایپ نے رواں ماہ اپنی نئی پرائیوٹ پالیسی کا اعلان کیا تھا، جس کے تحت صارفین کا ڈیٹا فیس بک سے شیئر کیا جائے گا، جس پر واٹس ایپ نے وضاحتی بیان میں کہا تھا کہ نئی پالیسی سے فیملی اور دوستوں کے ساتھ گفتگو پر کوئی اثر نہیں پڑے گا، نئی پالیسی کا مقصد کاروباری معاملات کو آسان بنانا ہے۔

انتظامیہ کا کہنا تھا کہ واٹس ایپ میں پیغامات اور کالز اب بھی “اینڈ ٹو اینڈ انکرپٹڈ” ہیں اور اس فیچر کو تبدیل نہیں کیا جا رہا ہے،واٹس ایپ اب بھی محفوظ ہے،واٹس ایپ اور فیس بک انتظامیہ نے اس حوالے سے پی ٹی اے کو بھی وضاحتی پیغام بھیجا تھا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >