انسٹاگرام کا 13 برس سے کم عمر بچوں کیلئے الگ ورژن متعارف کروانے کا فیصلہ

سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک نے 13 برس سے کم عمر بچوں کیلئے الگ فوٹو شیئرنگ موبائل ایپ "انسٹاگرام” کا الگ ورژن متعارف کروانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

بین الاقوامی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق اس خبر کی تصدیق انسٹاگرام کے سربراہ ایڈم موسیری نے بھی کردی ہے اور کہا ہے کہ کمپنی بچوں کیلئے الگ ورژن کی تیاری پر کام شروع کرچکی ہے۔

ایڈم موسیری نے مزید کہا کہ کمپنی یہ جانتی ہے کہ بچے یہ ایپ استعمال کرنا چاہتے ہیں جس کیلئے پہلے کوئی پلان تیار نہیں کیا گیا تھا تاہم اب ہم بچوں کیلئے الگ ورژن تیار کررہے ہیں جس کا کنٹرول والدین کے پاس ہوگا۔

ایڈم موسیری نے مزید بتایا کہ اس کا ایک حل یہ ہے کہ نوجوان افراد یا بچوں کے لیے انسٹاگرام کا ایک نیا ورژن تیار کیا جائے جہاں والدین کے پاس ٹرانسپیرنسی یا کنٹرول ہو۔

انسٹاگرام کے سربراہ نے کہا کہ یہ ان میں سے ایک چیز ہے جس کی ہم کھوج لگارہے ہیں۔

واضح رہے کہ مقبول فوٹو اینڈ ویڈیو شیئرنگ موبائل ایپلیکیشن انسٹاگرام 12 سال سے کم عمر بچوں کیلئے رجسٹریشن کی سہولت نہیں دیتی ، جس پر فیس بک کو بہت سے ای میلز موصول ہوتے ہیں جن میں بچوں کا کہنا ہے کہ وہ اپنے دوستوں سے رابطے میں رہنے کیلئے موبائل ایپس استعما ل کرنا چاہتے ہیں۔

دوسری جانب فیس بک کے ترجمان جو اوسبورن نے دی ورج کو ایک ای میل میں جواب دیا کہ بچے اپنے والدین سے پوچھ رہے ہیں کہ کیا وہ اپنے دوستوں سے رابطے میں رہنے کے لیے ایپس جوائن کرسکتے ہیں؟

جو اوسبورن کے مطابق اس وقت والدین کے پاس زیادہ آپشنز موجود نہیں ہیں اسلئے ہم اضافی پروڈکٹس کی تیاری پر کام کررہے ہیں، جیسا ہم نے میسنجر کڈز کے ساتھ کیا، جو بچوں کے لیے مناسب ہیں اور والدین اسے مینیج اور کنٹرول کرسکتے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >