پشاور ہائی کورٹ نے ٹک ٹاک پر سے پابندی ہٹادی

پشاور ہائی کورٹ نے ٹک ٹاک پر سے پابندی ہٹادی۔۔ ملک بھر میں ٹک ٹاک ایپ بحال کرنے کا حکم دیدیا

مختصر فیصلے میں کہا گیا ہے کہ ٹک ٹاک کو کھول دیا جائے لیکن اس پر غیر اخلاقی مواد اپلوڈ نہیں ہونا چاہئے۔

پشاور ہائی کورٹ نے11 مارچ کو پابندی لگائی تھی۔ چیف جسٹس قیصررشید خان نے ریمارکس دیئے تھے کہ ٹک ٹاک پر اپ لوڈ ویڈیوز معاشرے کو قابل قبول نہیں۔ ٹک ٹاک ویڈیوز سے معاشرے میں فحاشی پھیل رہی ہے۔ ٹک ٹاک سے سب سے زیادہ نوجوان متاثر ہورہے ہیں۔

جس کے بعد ٹک ٹاک پر پابندی لگانے کا حکم دیا گیا۔

تاہم پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس قیصر رشید کی سربراہی میں بینچ نے آج کو کیس کی دوبارہ سماعت کی جس میں ڈی جی ٹیلی پی ٹی اے بھی پیش ہوئے۔

عدالت نے استفسار کیا کہ ٹک ٹاک پر پابندی لگانے کے بعد اب تک غیر اخلاقی مواد ہٹانے کے حوالے سے کیا پیش رفت ہوئی ؟

اس پر ڈی جی پی ٹی اے نے بتایا کہ ’ہم نے ٹک ٹاک انتظامیہ کے ساتھ اس مسئلے پر دوبارہ بات کی ہے۔ٹک ٹاک انتظامیہ سے کہا ہے کہ جو باربار غلطی کرے اسے بلاک کردیں

عدالت کا کہنا تھا کہ اگر پی ٹی اے ایکشن لے گی تو لوگ ایسی ویڈیوز اپلوڈ نہیں کریں گے۔ آپ لوگوں کے پاس ایسا سسٹم ہونا چاہئے جو اچھے اور برے کی تمیز کرے


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >