سام سنگ سمیت 21 کمپنیوں کو پاکستان میں موبائل فون مینوفیکچرنگ کی اجازت

پاکستانیوں کیلئے خوشخبری۔۔ جنوبی کورین کمپنی سام سنگ جلد ہی پاکستان میں اسمارٹ فونز کی مقامی مینوفیکچرنگ شروع کرے گی،اس حوالےسے سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیداوار کا اجلاس میں بتایا گیا،

سینیٹر فیصل سبزواری کی زیر صدارت اجلاس میں وزارت کے عہدیداروں نے کمیٹی ممبرز کو آگاہ کیا کہ موبائل کمپنی سام سنگ کو بھی مقامی مارکیٹ میں لانے کی تیاری کرلی گئی ہے،سام سنگ نے مقامی مینوفیکچرنگ کے لئے کِیا اور ابراہیم سنز کو شارٹ لسٹ کیا ہے۔

کمیٹی ممبران کو بتایا گیا کہ موبائل فون کی برآمدات کی فروغ کیلئے مقامی مینوفیکچررز کو 3 فیصد آر اینڈ ڈی الاؤنس دیا جاتا ہے،مقامی طور پر جمع یا تیار شدہ فونز کو گھریلو فروخت پر 4فیصد ود ہولڈنگ ٹیکس سے بھی استثنیٰ حاصل ہے،سینیٹر ولید اقبال نے اس اقدام کو وزارت صنعت و پیداوار کی جانب سے کامیابی قرار دیا،

انہوں نے بتایا کہ ملک میں موبائل فون کا 85 فیصد ہر سال درآمد کیا جاتا ہے،مقامی مارکیٹ اور برآمدات کے لئے موبائل فونز کی مقامی صنعت کو فروغ دیتے ہوئے اکیس نئی کمپنیوں کو مقامی مینوفیکچرنگ اور اسمبلی شروع کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔

وزارت صنعت و پیداوار کے ایک شعبے انجینیئرنگ ڈیولپمنٹ بورڈ نے گزشتہ سال موبائل ڈیوائس مینوفیکچرنگ پالیسی منظور کی تھی جس کے بعد مارچ سے جون تک 21 کمپنیوں کو موبائل فون مینوفیکچرنگ کے لیے گرین سگنل ملا ہے،

ای ڈی بی کی فہرست کے مطابق نوکیا، اوپو، انفنکس، ٹیکنو، آئی ٹیل، ویو، الفا، ریئل می، ویگوٹیل، ڈی کوڈ، کال می، ایکسیل، اسپائس، ٹی سی ایل الکاٹیل برانڈ کی یہ فیکٹریاں راولپنڈی، کراچی، لاہور، فیصل آباد اور اسلام آباد میں قائم ہیں۔

  • Great, it will not only create more jobs, help in skill development, set future course for industrialization but will also help in save more and more reserves which are wasted on importing mobile phones.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >