خبردار: ونڈوز 11مائیکروسافٹ کے علاوہ کسی بھی ویب سائٹ سے ڈاؤن لوڈ نہ کریں

صارفین ونڈوز 11 کا سافٹ وئیر مائیکروسافٹ کی ویب سائٹ کے علاوہ کسی نامعلوم ویب سائٹ سے ہرگز ڈاؤن لوڈ نہ کریں ورنہ آپکا کمپیوٹر ہیک اور اہم انفارمیشن چوری ہوسکتی ہیں۔

جیسے ہی مائیکروسافٹ نے ونڈوز 11 کا نیا ورژن لانچ کیا ہے اور مائیکروسافٹ ونڈوز انسائیڈر پر ونڈوز 11 آزمائشی طور پر ڈاؤن لوڈ کیلئے پیش کی ہے تب سے ہیکرز بھی متحرک ہوگئے ہیں، جو ونڈوز 11 مختلف ویب سائٹس پر اپلوڈ کرکے یہ دعویٰ کرتے ہیں کہ یہ ونڈوز 11 کا ایکٹیویٹڈ ورژن ہے، اس ورژن کے ہوتے ہوئے آپکو ونڈوز 11 خریدنے کی ضرورت نہیں ہے۔

اس پر معروف انٹی وائرس کمپنی کیسپرسکائی نے اپنی آفیشل ویب سائٹ پر ایک حالیہ بلاگ میں صارفین کو خبردار کیا ہے کہ صارفین کسی بھی نامعلوم ذریعے سے ونڈوز 11 ڈاؤن لوڈ ہر گز نہ کریں کیونکہ ہیکروں نے ’ونڈوز 11‘ کو ریلیز سے پہلے ہی اپنا شکار بنا کر طرح طرح کے وائرسوں میں مبتلا کردیا ہے اور مختلف ویب سائٹس پر لنکس شئیر کرکے صارفین کو اپنی طرف راغب کرنا شروع کردیا ہے ۔

کیسپرسکائی کاکہنا ہے کہ صرف مائیکروسافٹ ’ونڈوز انسائیڈر‘ پروگرام میں شرکت کرنے والے ہی ونڈوز 11 کو آزمائشی طور پر ڈاؤن لوڈ کرکے استعمال کرسکتے ہیں۔

انٹرنیٹ سکیورٹی فرم ’’کیسپرسکی‘‘ کا کہنا ہےکہ چوری شدہ سافٹ ویئر مفت میں فراہم کرنے والی مختلف ویب سائٹس پر ونڈوز 11 کی انسٹالیشن فائلز موجود ہیں۔کیسپرسکی کے مطابق، یہ تمام انسٹالیشن فائلز مشکوک ہیں مگر ان میں سے ایک خاص فائل، جو
86307_windows 11 build 21996.1 x64 + activator.exe

کے نام سے ہے۔ یہ فائل 1.75 جی بی پر مشتمل ہے اور اس فائل میں کئی قسم کے وائرسز، ایڈوئیرز اور مالوئیرز ڈال دئیے گئے ہیں۔

جیسے ہی آپ ان ویب سائٹس سے ونڈوز 11 ڈاؤن لوڈ کرکے اپنے کمپیوٹر میں انسٹال کرتے ہیں تو کمپیوٹر کی سپیڈ انتہائی سلو جاتی ہے اوراور اسکرین پر درجنوں اشتہارات کی بھرمار ہوجاتی ہے ۔ جب بھی آپ کوئی براؤزر اوپن کریں یہ اشتہارات آپکا پیچھا نہیں چھوڑتے۔

پھر آپ کسی بھی انٹی وائرس اور انٹی مالوئیر سے سکین کرتے ہیں تب بھی ان اشتہارات سے آپکی جان نہیں چھوٹے گی اور آپکو مجبورا سافٹ وئیر ہی ڈیلیٹ کرکے نیا سافٹ وئیر انسٹا ل کرنا پڑتا ہے۔

جعلی ونڈوز 11 کے بعض ورژنز ایسے بھی ہیں جو اسپائی وئیر، کی لاگرز پر مشتمل ہوتے ہیں اور ان ورژنز کے ذریعے آپکی قیمتی معلومات چوری ہوسکتی ہیں۔ اس ونڈوز میں موجود کی لاگرز ہیکر کو یہ بتادیتے ہیں کہ آپ نے کونسی ویب سائٹ ٹائپ کرکے کھولی، اپنے کمپیوٹر کی بورڈ کےذریعےکونسے بٹن کب اور کس ترتیب سے دبائے۔

ہیکرز آپکے ای میل پاسورڈ، بنک اکاؤنٹ تفصیلات چوری کرکے آپ کو ناقابل تلافی نقصان پہنچاسکتا ہے ۔ اسلئے ونڈوز 11 کے ایسے جعلی ورژنز سے گریز کریں، صرف مائیکروسافٹ کی آفیشل ویب سائٹ سے ونڈوز 11 ڈاؤن لوڈ کریں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>