‘ویڈیوزلیک کرنے والوں سے جان کاخطرہ تھا’

گزشتہ برس شوبز انڈسٹری کو خیر باد کرنے والی رابی پیرزادہ نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں ان کی ویڈیوز لیک کرنے والوں سے جان سے جانے کا بھی خطرہ تھا

انہوں نے کہا کہ ایف آئی اے نے ویڈیوز وائرل کرنے والوں کو تلاش کرلیا تھالیکن وفاقی تحقیقاتی ادارے کے حکام نے تنبیہ کی تھی کہ اس کی تفصیلات میں جانے کی ضرورت نہیں کیونکہ اس سے ان کی زندگی خطرے میں پڑسکتی ہے
رابی پیرزادہ نے کہا اب یہ مقدمہ میں نے اللہ کےسپرد کردیا ہے۔اللہ جانے، وہ گناہ گار جانیں اور وہ لوگ جانیں جو اب بھی ویڈیوز شیئر کر رہے ہیں
ان کا کہنا تھا کہ وہ شوبز انڈسٹری میں رہتے ہوئے بھی بہت سے گناہوں سے بچی ہوئی تھیں لیکن عمرہ کرنے کے بعد اُنہیں احساس ہوا کہ ان کی پرانی زندگی غفلت والی زندگی تھی جس میں وہ خود کو ضائع کر رہی تھیں۔رابی پیرزادہ نے کہا کہ انہوں نے اس وقت شوبز سے کنارہ کشی اختیار کی جب وہ شہرت کی بلندیوں پر تھیں اور بہت پیسے کما رہی تھیں۔ اُن کے بقول، جب ان کی وائرل ویڈیوز آئیں تو ان کا کام مزید بڑھ گیا تھا اور ہر کوئی اُنہیں کام کی آفرز کر رہا تھا

انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ وہ خود کو مزید ضائع نہیں کرنا چاہتیں اور اللہ کو بتانا چاہتی ہیں کہ اس کی ایک بندی ہے جو برائی کی راہ چھوڑ چکی ہے
رابی نے کہا چند لوگوں کو ان کا میڈیا پر آکر اللہ کی باتیں کرنا پسند نہیں۔ ایسے لوگوں کی تعداد دو سے تین فی صد ہے۔ لیکن جب تک اللہ نے زندگی دی ہے اللہ کی حمد اور پیغمبرِ اسلام کی تعلیمات کا پرچار کرتی رہوں گی۔
ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے میرا جسم میری مرضی والا نعرہ تبدیل کیا ہے نہیں۔میرا جسم میرے اللہ کی مرضی۔۔۔یہ پیغام دینا بہت ضروری تھا کیوں کہ مجھ سے پہلے جس کی بھی اس طرح کی ویڈیوز لیک ہوئیں تو وہ راتوں رات سپر اسٹار بن گئے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >