شوہر کا ہونا یا نہ ہونا میرے لئے ایک برابر ہے، گلوکارہ صنم ماروی

Sanam Marvi

گلوکارہ صنم ماروی کا کہنا ہے کہ میرے لیے شوہرکا ہونا، نہ ہونا برابر ہے، 11 سال سے شوہر کا تشدد برداشت کر رہی ہوں۔

گلوکارہ صنم ماروی لاہورکی فیملی کورٹ میں پیش ہوئیں اور اپنے شوہر کے خلاف بیان ریکارڈ کروادیا، شوبز انڈسٹری میں شادیاں ناکام ہونے کی بڑی وجہ بتاتے ہوئے صنم ماروی نے کہا کہ جھوٹ گھرانوں کی تباہی کا بڑاسبب ہے، گولیاں کھا کر مرنے سے بہتر ہے کہ علیحدگی اختیار کرلوں۔

گلوکارہ صنم ماروی نے عدالت کو بتایا کہ حامد علی سے 2009 ءمیں شادی ہوئی مگرکچھ عرصے بعدہی شوہر کا رویہ بدل گیا تھا۔ہ شوہر تشدد کرتا ہے،گزارہ ممکن نہیں۔ خاوند بچوں کے سامنے گالم گلوچ اور مار پیٹ کرتا ہے۔ عدالت خلع کی ڈگری جاری کرے

صنم ماروی نے اپنے شوہر پر الزام لگایا کہ میرا شوہر کوئی کام نہیں کرتا، جب بیوی کماتی ہے تو شوہر اور اس کی فیملی اس پر انحصار کرتے ہیں، جس سے گھر خراب ہوتے ہیں۔

دوسری جانب عدالت نے اُن کے شوہرحامد علی کا جواب آنے تک کیس پر سماعت ملتوی کر دی ہے۔

واضح رہے کہ صنم ماروی نے اپنے شوہر کے خلاف خلع کی درخواست دائر کررکھی ہے اور اپنی درخواست میں صنم ماروی نے الزام لگایا تھا کہ شوہر ان پر تشدد کرنے سمیت ان کے خلاف نازیبا زبان بھی استعمال کرتے ہیں اور وہ شوہر کے ایسے رویے کو برداشت کرکے تھک گئی ہیں۔

صنم ماروی کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں کہا گیا تھا کہ ان دونوں کی شادی مکمل اسلامی روایات کے مطابق ہوئی اور جوڑے کے 3 بچے بھی ہیں جن کی وجہ سے گلوکارہ شوہر کا تشدد برداشت کرتی رہیں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>