کیا واقعی عائزہ خان کو کسی نے ائیرپورٹ پر گھٹیا عورت کہا؟دیکھیے اس پر عائزہ خان کا ردعمل

مشہور ڈرامہ سیریل میرے پاس تم ہو اختتام پزیر تو ہوگیا لیکن اس کی یاد عرصے تک تازہ رہے گی اور اس کے مشہور زمانہ ڈائیلاگز بھی عرصے تک یاد رکھے جائیں گے۔


ڈرامے میں مرکزی کردار ادا کرنے والی اداکارہ عائزہ خان کے حوالےسے ایک خبر سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی جس کے جواب میں اداکارہ نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سوشل میڈیا پر چلائی جانے والی جھوٹی خبروں پر لوگ یقین نہ کریں۔
تفصیلات کے مطابق سوشل میڈیا پر ایک خبر وائرل ہوئی جسے لوگوں نے شیئر کیا اور اس پر تبصرے شروع ہوگئے کہ عائزہ خان کو کسی ایئر پورٹ پر ایک شخص نے ڈرامے کے مشہور زمانہ ڈائیلاگ "دو ٹکے کی عورت” کہہ کر پکارا جس پر عائزہ خان نے اس پر کافی برا منایا اور وہاں سے راہ فرار اختیار کی۔

جس کے جواب میں عائزہ خان نے انسٹا گرام پر ایک پیغام میں ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ ” کسی نے کچھ بھی کہہ دیا اور پوری دنیا نے اس پر یقین کرلیا، کیا کہنے والوں کے پاس کوئی ویڈیو ثبوت ہے؟۔
انہوں نے مزید کہا کہ” لوگ مجھے پاگلوں کی طرح پیار کرتے ہیں مہوش بن کر مجھے لوگوں کا جتنا پیار اور عزت ملی اس پر میں اللہ کا جتنا شکر ادا کروں کم ہے،
انہوں نے بلاگرز اور سوشل میڈیا صارفین کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا کہ میرا نقطہ نظر شامل کیے بغیر اس خبر کو کیسے پھیلایا جاسکتا ہے؟
انہوں نے اپنے مداحواں کیلئے لکھا کہ ایک بات میں سب کو واضح طور پر بتادنیا چاہتی ہوں میں ایک اداکارہ ہوں اور مختلف کردار ادا کرتی ہوں، مجھے لوگوں سے اتنا پیار ملتا ہے جو میں بیان نہیں کرسکتی، لوگوں نے مجھے مہوش کے کردار میں بھی سراہا ہے میں اس کے لیے لوگوں کا شکریہ ادا کرتی ہوں۔
یا د رہے کہ سوشل میڈیا پر ایک صارف نے پوسٹ کی اور دعوی کیا کہ انہوں نے عائزہ خان کو ایئر پورٹ پر غصے میں تیز تیز چلتے ہوئے دیکھا جب ان کے اردگرد موجود لوگ زور زور سے دو ٹکے کی عورت ، دو ٹکے کی عورت کہہ رہے تھے۔ یہ پوسٹ اس کے بعد سینکڑوں افراد نے شیئر کی جس پر جواب دیتے ہوئے عائزہ خان نے ناراضگی کا اظہار کیا۔

  • صرف لبرل عورتیں اور اُن کے پالتو ہجڑے بلاوجہ عورت کارڈ استمال کرتے ہیں۔

    حقیقت میں لبرل صرف عورت کو گشتی کی شکل میں دیکھنا چاہتے ہیں۔


  • 24 گھنٹوں کے دوران 🔥

    View More

    From Our Blogs in last 24 hours 🔥

    View More

    This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

    >