پاک بھارت سنگرز کے آن لائن گانے پر بھارتی فلم انڈسٹری کا بورڈ سیخ پا


کورونا وائرس بحران کے باعث دنیا بھرمیں صحت کے معاملات سنگین صورتحال اختیار کرچکے ہیں ، لوگ گھروں میں قید رہنے پر مجبور ہیں ایسے میں دنیا بھر کے آرٹسٹس انٹرنیٹ کی مدد سے لوگوں کو تفریح کے نت نئے مواقع فراہم کرنے میں مصروف ہیں، پاکستان اور بھارت کے سنگرز بھی اپنے لوگوں کو انٹرٹین کرنے کیلئے مختلف سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر اکھٹے دیکھے جارہے ہیں۔

نوجوان پاکستانی سنگر علی سیٹھی گھر میں قرنطینہ کے دوران انسٹا گرام لائیو کے ذریعے موسیقی کے مداحوں کو تفریح فراہم کرتے رہتے ہیں حال ہی میں انہوں نے ایک ویڈیو پوسٹ کی جس میں بھارت کی سریلی گلوکارہ ریکھا بھردواج اپنے شوہر کے ہمراہ پاکستان کی لیجنڈ گلوکارہ فریدہ خانم کے ساتھ لائیو سیشن میں شریک ہوئیں ،

لائیو سیشن کے دوران فریدہ خانم نےمداحوں کی پرزور فرمائش پر اپنا مشہور گانا "آج جانے کی ضد نہ کرو” گنگنا یا جس پر ریکھا اور ان کے شوہر نے بھی خوب داد دی، علی سیٹھی اس سے پہلے ریکھا بھردواج کے ساتھ لائیو تھے، اور چند روز پہلے اور بھارت کے مشہور سٹینڈ اپ کامیڈین اور شاعر ذاکر خان کے ساتھ بھی لائیو تھے،

دونوں ملکوں کے فن کاروں کی یہ بڑھتی ہوئی قربت بھارتی انتہا پسندوں کو کیسے پسند آسکتی ہے، ایسے ماحول میں جب دنیا ایک مشترکہ دشمن کورونا کے خلاف مل کر کام کرکے اسے شکست دینے کی ترغیب دے رہی ہے بھارت سوائے نفرت کے بیج بونے کے کچھ اور نہیں کررہا۔

سرحد پار فنکاروں کی ایک دوسرے کے ساتھ اکھٹا کام کرنے پر کورونا سے پریشان حال دونوں ملکوں کے باسی تو خوش ہیں اور روزانہ مختلف فنکاروں کو ایک ساتھ پرفارم کرنے کی فرمائشیں بھی کررہے ہیں لیکن ہمیشہ کی طرح بھارت کی کچھ انتہا پسند تنظیموں کو یہ سب ایک آنکھ نہیں بھار ہا اور ان کی جانب سے ایسی سرگرمیوں پر پابندی عائد کرنے کے فیصلے دیکھنے میں آرہے ہیں،

بھارت کی فیڈریشن آف ویسٹرن انڈیا سینی ایمپلائز(ایف ڈبلیو آئی سی ای) کی جانب سے تمام فن کاروں کو نوٹس جاری کیا گیا ہے کہ کوئی بھی فن کار کسی بھی پلیٹ فارم پر پاکستانی فن کاروں ، گلوکاروں یا تکنیکی ماہرین کے ساتھ کام نہیں کرسکتا، نوٹس کو نان کوآپریشن سرکلر کا نام دیا گیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ایک بھارتی گلوکار کی پاکستان کے مشہور گلوکار راحت فتح علی خان کے ساتھ انٹرنیٹ پر لائیو جانے کے بعد بھارتی سینما بورڈ کے ادارے ایف ڈبلیو آئی سی ای کی جانب سے یہ پابندی عائد کی گئی،

نوٹس میں کہا گیا ہے کہ نان کوآپریشن سرکلر کے تحت تمام فن کاروں کو پابند کیا جاتا ہے کہ وہ کسی بھی طرح اور طریقے سے پاکستانی اداکاروں، گلوکاروں اور تکنیکی ماہرین کے ساتھ مل کر کام مت کریں، کچھ اراکین کی جانب سے اس سرکلر کی کھلے عام خلاف ورزی دیکھی گئی ہےاور وہ مختلف پلیٹ فارمز کو استعمال کرکے پاکستانی فن کاروں کے ساتھ کام کرتے دیکھے گئے ہیں جن میں ہمارے کچھ موسیقار راحت فتح علی خان کے ساتھ انٹرنیٹ پر لائیو دیکھے گئے اور مزید ایسے پروجیکٹس پر کام جاری ہے”۔

سرکلر میں مزید کہا گیا کہ ایف ڈبلیو آئی سی تمام اراکین کو وارننگ جاری کرتا ہے کہ "نان کوآپریشن سرکلر پر سختی سے عمل درآمد کروایا جائے گا، اگر کوئی گلوکار، موسیقار یا کوئی اور فن کار پاکستان کے آرٹسٹس کے ساتھ کام کرتا ہوا پایا گیا تو اس کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا، اس لیے تمام اراکین نوٹ کرلیں ہم امید کرتے ہیں کہ تمام ممبرز اس نصیحت پر عمل کریں گے کیونکہ ایسا کرنا ان کے حق میں بہتر ہوگا”

  • یہ شاید دنیا کی بدترین قوم ہے کہ جن میں بغض نفرت اور انتہا پسندی کوٹ کوٹ کر بھری ہے۔ انڈیا کے لبرلز، مسلمان ، عیسائی، افریقی، کشمیری اور بنگالی سب ہی ان انتہا پسندوں کے ہاتھوں ڈرے سہمے اپنی جان اور عزت بچانے کے چکر میں چپ ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >