آوارہ کتوں پر ظلم: اداکارہ عشنہ شاہ کا روتے ہوئے ویڈیو پیغام

پاکستان ٹی وی اداکارہ عشنہ شاہ نے ایک ویڈیو پیغام میں زاروقطار روتے ہوئے بے زبان جانوروں پر بہیمانہ تشدد کو قدرتی آفات کی وجہ قرار دیدیا۔

عشنہ شاہ نے سحری کے بعد ایک ویڈیو بنائی جس میں روتے ہوئے انہوں نے بحریہ ٹاؤن کراچی میں انتظامیہ کی جانب سے ایک کتے کو گولی مارنے کا واقعہ بیان کرتے ہوئے کہا کہ سوشل میڈیا پر ایک شخص نے یہ ویڈیو بنائی جس میں بحریہ ٹاؤن انتظامیہ نے ایک عمارت کے ساتھ سوتے ہوئےایک آوارہ کتے کو ٹانگ پر گولی مار کر اذیت ناک حالت میں مرنے کیلئے چھوڑدیا۔

اپنے آنسوؤں کو چھپاتے ہوئے عشنہ شاہ نے کہا کہ ایک شخص جو ان مناظر کو کیمرے کی آنکھ میں قید کررہا تھا ممکن ہے کتے سے متعلق شکایت اسی نے لگائی ہو کیونکہ وہ انتظامیہ کی گاڑی آنے سے پہلے سے ویڈیو بنارہا تھا، بحریہ ٹاؤن کی انتظامیہ کے کچھ افراد ایک ٹرک میں آئے سوتے ہوئے کتے کی ٹانگ پر گولی ماری اور اسے تڑپتا چھوڑ کر چلتے بنے، وہاں موجود کسی شخص نے تکلیف میں چیختے کتے کی مدد کرنا گوارا نہیں کیا، یہاں تک کہ ویڈیو بنانے والے شخص نے بھی کتے کی چیخوں کو فلمایا تو ضرور لیکن اس کی تکلیف کو کم کرنے کیلئے کچھ نہیں کیا۔

شدید جذباتی کیفیت میں عشنہ شاہ نے کہا کہ وہاں ہر طرف خون پھیل گیا تھا، کچھ دیر بعد کتا مر گیا، اس کی تکلیف کا سب نے تماشا دیکھا کوئی بھی اس کی مدد کو نہیں پہنچا کوئی اسے آکر اس کی تکلیف سے نجات دلانے کیلئے آسان موت ہی دے دیتا، انتظامیہ کے افراد نے بھی اس کے سر یا چھاتی پر گولی نہیں ماری، اس پر دوسری گولی بھی ضائع کرنا مناسب نہیں سمجھا کہ اسے تکلیف سے نجات مل جائے۔

انہوں نے کہا اگر یہ کتا کسی کو تکلیف پہنچا رہا تھا تو اس کی کوئی وجہ ہوگی، جانور اپنے بچاؤیا دفاع میں حملہ آور ہوتے ہیں بغیر کسی وجہ کے حملہ کرنے کی خصلت جانوروں میں نہیں انسانوں میں ہوتی ہے، لوگ بہت سی برائیوں کو قدرتی آفات کی وجہ قرار دیتے ہیں ایک بے زبان پر اتنا بہیمانہ تشدد بھی عذاب کی وجہ بن سکتی ہے،اگر اس کا نام انسانیت ہے تو مجھے اپنے انسان ہونے پر شرم محسوس ہورہی ہے، اگر انسانیت اس حد تک گر چکی ہے تو یہ عذاب جو آیا ہوا ہے شائد ہم اسی قابل ہیں۔

ایسے واقعا ت سے نمٹنے کیلئے ضروری ہے کہ مناسب قانون سازی کی جائے جس کے تحت ایسے جانوروں کے تحفظ کو یقینی بنایا جاسکے اور انہیں شہری آبادیوں سے دور منتقل کیا جاسکے جہاں یہ محفوظ رہ سکیں۔

  • لاڑکانہ میں کتوں کے حملے سے ہلاک ہونے والے معصوم بچوں کی ہلاکت پر تو اس عورت کو رونا نہیں آیا.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >