شادی پر تنقید سے ہمیں کوئی فرق ہی نہیں پڑا,شہروز اور صدف

لاک ڈاؤن کے دوران شادی، سوشل میڈیا پر شدید تنقید اور آنے والی مزاحیہ ٹیلی فلم کے حوالے سے شہروز سبزواری اور صدف کنول نے شادی کے بعد اپنے پہلے انٹرویو میں سب کچھ بتادیا

انٹرویو میں جب شہروز سبزواری اور صدف کنول سے ان کی شادی سے متعلق پوچھا گیا تو شہروز نے کہا کہ ہمارے بڑوں نے ہم سے کہا کہ وہ قافلہ کبھی اپنی منزل تک نہیں پہنچا جس نے رک رک کر ہر بھونکنے والے کتے کو پتھر مارا ہو‘۔

صدف کنول نے کہا کہ ہم تو اس ساری نفرت پر ہنسے اور ہمیں کوئی فرق ہی نہیں پڑا۔ذاتی نوعیت کے حملوں سے متعلق سوال پر صدف نے کہا کہ کیا آپ کو میرے چہرے سے یا انداز سے محسوس ہو رہا ہے کہ مجھے کوئی فرق پڑا ہوگا۔صدف کا کہنا تھا کہ ان کے پاس ان کے شوہر ہیں، اتنا اچھا خاندان ہے اس لیے ان چیزوں سے انہیں فرق بالکل نہیں پڑتا۔

شادی پر تنقید: ’میں تو کہتی ہوں لوگ مزید بولیں تاکہ میرے گناہ دھلیں ‘

شادی پر تنقید: ’میں تو کہتی ہوں لوگ مزید بولیں تاکہ میرے گناہ دھلیں‘صدف اور شہروز سبزواری نے شادی شدہ زندگی اور نئے پروجیکٹ سے متعلق مزید کیا کہا، پڑھیے: https://www.independenturdu.com/node/40596

Posted by Independent Urdu on Saturday, July 4, 2020

انہوں نے مزید کہا کہ ان کی شادی پر جو ہنگامہ کھڑا ہوا، اس کی انہیں بالکل پرواہ نہیں کیونکہ اس سے پہلے بھی ایسے ہنگامے ہوچکے ہیں۔شہروز کا کہنا تھا کہ صدف کنول ذہنی طور پر ایک مضبوط لڑکی ہیں۔ آخر میں صدف نے کہا کہ میں تو کہتی ہوں لوگ مزید بولیں تاکہ میرے گناہ دھلیں۔

رواں سال مئی کے مہینے کے آخری دن جب ماڈل صدف کنول اور شہروز سبزواری  نے اپنی شادی کا اعلان اپنے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر کیا تو شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ صدف اور شہروز کی شادی بہت سادگی سے لاک ڈاؤن میں ہوئی تھی۔ اس حوالے سے صدف نے کہا کہ وہ ہمیشہ ہی سے چاہتی تھیں کہ ان کی شادی کم لوگوں کی موجودگی میں ہو۔

دوسری جانب شہروز نے کہا کہ شادی میں دعائیں دینے والوں کی ضرورت ہوتی ہے اور جیسے دیگر ممالک میں کئی مشہور شخصیات سادگی سے 70 یا 80 افراد کی موجودگی میں شادی کرتے ہیں اسی طرح ہم نے بھی کرلی، اس سے لاک ڈاؤن کا کوئی تعلق نہیں تھا۔

صدف کنول نے کہا کہ اب اگر انہیں کسی فلم میں آئٹم نمبر کی پیشکش ہوتی ہے تو وہ انکار کردیں گی، کیونکہ وہ پہلے اکیلی تھیں اور اب ان کی شادی ہوگئی ہے۔ ’میرا بہت بڑا خاندان ہے اس لیے ہر چیز دیکھ کر چلنا ہوتا ہے۔

اب یہ جوڑا شادی کے بعد پہلی مرتبہ ایک ساتھ ایک مزاحیہ ٹیلی فلم  ’نہ گھر کا نہ گھاٹ کا‘ میں کام کر رہا ہے، جو عیدالاضحیٰ کے موقع پر نشر کی جائے گی۔

شہروز سبزواری نے ٹیلی فلم کے بارے میں بتایا کہ یہ ایک مزاحیہ ٹیلی فلم ہے۔شہروز اور صدف کی شادی کے بعد یہ ان کا پہلا پروجیکٹ ہے جو وہ ساتھ کر رہے ہیں۔ اس بارے میں شہروز کا کہنا تھا کہ انہیں شادی کے بعد سے بہت سے ڈراموں میں کام کرنے کی پیشکش کی گئی تھی تاہم جب اس ٹیلی فلم کا اسکرپٹ سامنے آیا تو ’صدف نے کہا کہ میں کامیڈی کرنا چاہوں گی۔صدف کنول نے کہا کہ ’میں کچھ مختلف کام کرنا چاہتی تھی اور یہ کافی مختلف کام تھا۔

شہروز نے کہا کہ اس ٹیلی فلم میں وہ اور صدف کنول شادی شدہ ہیں اور جاوید شیخ صدف کے والد بنے ہوئے ہیں جو اصل زندگی میں ان کے ماموں ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اس ٹیلی فلم میں ان کے والد کی دکانیں ہیں جن پر وہ کام کرتے ہیں اور انہیں ہتھیانا چاہتے ہیں، اب یہ کام کیسے کرتے ہیں یہ عیدالضحیٰ پر دیکھ لیں۔

انٹرویو کے اختتام پر دونوں نے عوام سے گزارش کی کہ کرونا سے بچاو کیلئے احتیاطی تدابیر اپنائیں ۔ خود کو اور دوسروں کو محفوظ رکھیں، خوش رہیں اور سب کو خوش رکھیں کیونکہ زندگی نفرت کرنے کے لیے بہت چھوٹی ہے۔

  • zahir hai muaashrey k jis hisse se aap log belong taluk rakhte ho uss profession ke waja se aap logo kisi b terha ke tanqeed ka koi asar pur he nahi sakta, agar pur jaey to aap log ye profession he chor dein,


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >