عائشہ عمر کااپنے سے دوگنی عمر کے مرد کے ہاتھوں ہراسانی کا انکشاف

عائشہ عمر کااپنی سے دوگنی عمر کے مرد کے ہاتھوں ہراسانی کا انکشاف

پاکستان کی بولڈ اور ماڈرن ماڈل و ایکٹرس عائشہ عمر نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں بھی انڈسٹری میں 15 سال تک جنسی طور پر ہراسانی کا نشانہ بنایا گیا۔

دنیا بھر میں خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کیے جانے پر اس کے خلاف آواز اٹھانے کیلئے عورتوں کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے، اکتوبر 2017 میں شروع ہونے والی می ٹو مہم نے دنیا بھر میں خواتین کوحوصلہ دیا کہ وہ خود پر بیتی داستان کو دنیا کے سامنے رکھ سکیں ، پاکستان میں میشا شفیع سے لے کر فلمساز جامی تک نے اس مہم کے تحت آواز اٹھائی اور اب اس مہم میں نئی شامل ہونے والی شخصیت عائشہ عمر ہیں۔

بہت سے لوگ اس حقیقت کو تسلیم نہیں کریں گے لیکن حقیقت اتنی ہی تلخ اور گھناؤنی ہے ۔ بولڈ اور پر اعتماد عائشہ عمر بھی انڈسٹری میں بہت عرصے تک اپنے سے دوگنی عمر کے مرد کے ہاتھوں جنسی طور پر ہراسانی کا شکار رہی ہیں۔

View this post on Instagram

. In 2017, Rose McGowan decided to break the silence about Hollywood and one of the most powerful men in it, Harvey Weinstein. She decided to tell her story to the world. Did the world believe her? Not really. As is the case with most silence breakers. “Time” magazine, though recognised her as one of the Silence Breakers and their Person of the year, for speaking out about sexual harassment/assault. Soon after, several other actresses started sharing their stories of assault by the same monster. Her book “Brave” tells her story in her own voice. A singular voice that stands in a large arena full of women with similar stories of assault and rape. . In my eyes, Rose is one of the bravest women in the world today. I have watched several of her interviews and the way she articulates her feelings, emotions and thoughts is mesmerising. She hits the nail on the spot. Every single time. Rose is also an angry woman. A woman who allows herself to feel and feels no need to justify her emotions to anyone. Her fight is to allow all women in society to feel angry for what they have been through. For what they have been made to go through. Two years ago, I finally allowed myself to acknowledge and talk about my own sexual harassment story by a powerful monster, twice my age. When Rose agreed to go live with me, I felt I was dreaming. It was unreal. I thought non-stop about everything that I wanted to ask her, everything that I wanted to tell her about Pakistan. But she’s been asked everything and she’s answered everything…. that’s why I decided to chat with Rose about how she is doing right now, at this moment in her life, let the conversation flow freely…. and it did… it was real and honest, probably uncomfortable for some…. I did think of some solid questions to ask but never got around to them… they are all still floating in my head. We plan to go live again in a week, and this time go deeper into the various layers and constructs of societies all over the world. Would love for you all to join. Until next time folks! 🌹🧚‍♀️✨❤️ . . #ayeshaomar #rosemcgowan #metoo #feminism #feminist #womensupportingwomen #timesup #speakup #crazy #keepitreal #hereandnow

A post shared by Ayesha Omar (@ayesha.m.omar) on

انہوں نے یہ انکشاف ہالی ووڈ اداکارہ روز مکگوون کے ساتھ انسٹا گرام لائیو سیشن کے دوران کیا ، جس میں دونوں نے اپنے فینز کے ساتھ اپنی زندگی کے یہ پہلو شیئر کیے، عائشہ عمر کا کہنا تھا کہ میں انڈسٹری میں آئی ہی تھی۔ 23 برس کی کالج سے نکلی لڑکی ،کہ انڈسٹری میں میرے ساتھ یہ ہونا شروع ہوا، ایک بہت ہی طاقتور مرد جس کی عمر مجھ سے دوگنی تھی مجھے ہراساں کرتا رہا۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ ایک بار کا ہونے والا واقعہ نہیں تھا یہ سلسلہ سالوں تک جاری رہا میں اسے حل نہیں کرپارہی تھی میں نے اسے ایک ڈبے میں بند کیا اور کہا اچھا میری زندگی میں یہ ہورہا ہے اور مجھے اس سے لڑنا ہوگا۔

عائشہ عمر نے مزید کہا کہ میں یہ کسی سے شیئر کرنا نہیں چاہتی تھی میں نے 15 سال اسے جھیلا ہے اور آخر کار 2 برس قبل میں نے اس پر بات کی، انڈسٹری کی میری ایک دوست بھی اسی قسم کی صورتحال کا شکار ہوئیں مجھ سے تب پوچھا گیا کہ آپ کو کیا لگتا ہے یہ اداکارہ سچ بول رہی ہیں، کیا واقعی انڈسٹری میں جنسی ہراسانی ہوتی ہے ؟

یہ پہلا موقع تھا جب میں نے اس پر بات کی، مجھ سے پوچھا گیا کیا آپ کے ساتھ ایسا ہوا میں نے کہا جی ہاں، میں اس وقت اس پر بات نہیں کرنا چاہتی تھی آج کررہی ہوں میں نے اب تک اپنے مجرم کا نام نہیں لیا ہے، لیکن میں نے اس پر بات کرنا شروع کردی ہے۔

  • apni say 15 saal baree umer. Bhai apni umer ka jo marzee karay koyee baat nahee, 10 saal baad 15/25 saal baray mard say kha pee ker mazay lay ker uss per ilzaam laga doo. Inn aurtoon ko sare aam jootay marnay chiye woh bandaroon say……#G++hteeAurt++n

  • Inn pedo aurtoon per joo schools mein aur Ayesha Umer jaisee budhee aurtoon ko bhi jootay marnay chiyein….Yeh khud pedo ho gee. Aur aindaa yeh apni say kam umer mard ko haath lagayee tu iss per Harrasement ka dawa lagna chiye…

  • DID ANY ONE BOTHERED TO VERIFY HER STORY, DID SOME ONE TRIED TO GET THE WORDS OF THAT PERSON? There are many cases of genuine harassment against women at work places, but it is becoming kind of easy way to get cash by fooling a man , enjoying till you don’t get other and then promoting your innocence to blackmail the guy. BE CAREFUL

  • You sell your body and get favours to reach higher and higher in the field. When you warm someone’s bed it suits you and you do it willingly. No man can dare do anything by force to you vulgar whores.

  • ساری عمر اس بیچارے کی دولت پر عیاشی کی ھو گی جب مال آنا بند ھو گیا تو ھیراسمنٹ کا ڈنڈورھا پیٹ رہی ہے سالی وہ بھی 15 سال کے بعد۔۔۔۔ اتنی کون سی مجبور ی تھی جو تب زبان نہیں کھولی

  • یہ صحیح ہے کہ انڈسٹڑی میں کنجر پن ہوتا ہے، یہ بات ان عورتوں کو بھی پتہ ہوتی ہے کہ ترقی کا راستہ دو ٹانگوں کے بیچ سے گذرتا ہے، جب یہ راستہ عام ہوجاتا ہے تو کچھ لوگ راستہ بدل لیتے ہین، پہلے تو یہ عورتیں ان کو منانے کی کوشش کرتی ہیں پھر بلیک میل کی دھمکی دیتی ہیں،
    اگر ایسی نیک پروین کا میڈیکل کرایا جانے تو نہ جانے کتنے لوگوں کے ڈی این اے پکڑے جائیں ۔۔۔۔

  • I am no one to judge anyone BUT how can you get abused over and over again. It’s not like he is your family member. I can understand one time assault on an aspiring actress But over & over again is beyond me. Was working in Industry or working with that person so so important for you that you kept going back to him?


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >