شہزادرائے اور واسو کی وزیراعلیٰ بلوچستان سے ملاقات، واسو کیلئے مالی امداد

گلوکار شہزادرائے اور لوک فنکار واسو کی وزیراعلیٰ بلوچستان سے ملاقات ہوئی ۔۔حکومت بلوچستان نے واسو کیلئے امداد کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق گلوکار شہزادرائے کے ساتھ متعدد گیتوں میں جلوہ ہونیوالے بلوچستان کے لوک گلوکار واسو ان دنوں معاشی مسائل کا شکار ہیں اور کسمپرسی کی زندگی گزاررہے ہیں۔

واسو کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوئیں تو سوشل میڈیا صارفین نے شہزادرائے کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا کہ شہزادرائے نے مشکل وقت میں اپنے ساتھی کو چھوڑدیا۔

لوک فنکار واسو کا کہنا ہے کہ شہزاد رائے کی کوششوں سے ان کی وزیراعلیٰ بلوچستان سے ملاقات ہوئی۔ شہزاد رائے نے جعفر آباد میں جو مکان خرید کردیا تھا جسے وہ سیلاب کے باعث فروخت کرچکے ہیں۔

واسو نے مزید بتایا کہ آج وزیراعلیٰ بلوچستان نے انہیں تین لاکھ روپے کا امدادی چیک دیا۔

واسو نے مزید کہا کہ گلوکار شہزاد رائے نے ان کے بیٹے کو ملازمت دلوائی تھی لیکن بیماری کے باعث بیٹے کو ملازمت چھوڑنا پڑی۔

لوک گلوکار واسو کا کہنا تھا کہ بیماری کی وجہ سے اس کے مالی حالات خراب ہوگئے ہیں لیکن وزیراعلیٰ بلوچستان نے اسے تین لاکھ روپے امداد کا چیک دیا ہے۔

واضح رہے کہ کچھ روز قبل ترجمان بلوچستان حکومت لیاقت شاہوانی نے بھی واسو سے ملاقات کی تھی۔ اس ملاقات میں واسو نے انہیں وہی گیت سنایا تھا جو انہوں نے شہزاد رائے کے ساتھ گایا تھا۔

واضح رہے کہ واسو نے شہزاد رائے کے ٹی وی پروگرام ‘واسو اور میں’ سے شہرت پائی تھی۔2011 میں ایک یوٹیوب ویڈیو دیکھ کر شہزادرائے نے بلوچستان کے ایک گاؤں سے واسو خان کو ڈھونڈنکالا تھا، واسو اپنے مخصوص انداز اور لہجے میں اپنی ویڈیوز میں عموماً پاکستانی سیاست کو تنقید کا نشانہ بناتے تھے۔

شہزاد رائے نے ان کے ساتھ مل کر ایک مشہور گانا ’اپنے الو‘ بنایا، جس کے بعد ایک ٹی وی شو "واسو اور میں "بھی سامنے آیا جس نے واسو کی شہرت میں اضافہ کیا لیکن پھر وہ گمنامی کی دنیا میں چلے گئے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >