فیک فالورز کے ذریعے سب سے زیادہ ویوزلینے کا اعزازبھارتی گلوکارکے گلے پڑگیا

بھارتی گلوکار اور ریپر ‘بادشاہ’ کا پیسے لگا کر ریکارڈ بنانا گلے پڑ گیا۔۔۔ گلوکار پر لاکھوں روپے خرچ کرکے جعلی ویوز خریدنے کا االزام ہے۔

بھارتی پولیس کے مطابق گلوکار اور ریپر بادشاہ نے 24 گھنٹوں میں سب سے زیادہ ویوز لینے والے بھارتی گلوکار ہونے کا اعزاز رقم ادا کر کے خریدا۔

ممبئی پولیس سوشل میڈیا کے جعلی فالوورز کے ایک کیس کی تحقیقات کر رہی ہے۔ یہ کیس اس وقت شروع ہوا جب پلے بیگ سنگر بھومی ترویدی کو پتا چلا کہ ان کے نام کا جعلی پروفائل بنا کر لوگوں کو بے وقوف بنایا جا رہا ہے۔

پولیس نے کیس کی تفتیش کے لیے گلوکار بادشاہ کو طلب کیا جنہوں نے تحقیقاتی ٹیم کے سامنے اعتراف کیا کہ انہوں نے یوٹیوب پر ویوز لینے کے لیے کمپنی کو 72 لاکھ روپے کی رقم ادا کی۔ گلوکار اپنی حرکت پر بالکل بھی نادم نہیں ہیں اور انہوں نے تفتیش کے دوران یہ بھی کہا کہ پیسوں کے عوض ویوز لے کر میں نے کوئی غلط کام نہیں کیا۔

گلوکار نے اس بات کا اعتراف کیا کہ رقم دینے کے عوض اُن کے گانے ’پاگل ہے‘ کی ویڈیو پر 7 کروڑ 20 لاکھ ویوز آئے اور اسی طرح انہوں نے چوبیس گھنٹے کے اندر ورلڈ ریکارڈ بنایا۔ بادشاہ کے مطابق انہوں نے ٹیلر سوئفٹ اور کورین بینڈ کے ریکارڈ توڑ کر اعزاز اپنے نام کیا۔ یاد رہے کہ ریپر کے دعوے کو گوگل نے مسترد کر تے ہوئے ویوز کو جعلی قرار دیا تھا۔

ممبئی پولیس کے ڈپٹی کمشنر نند کمار ٹھاکر کا کہنا تھا کہ بادشاہ نے خود اس بات کا اعتراف کیا کہ انہوں نے ورلڈ ریکارڈ بنانے کے لیے ایک کمپنی کو 72 لاکھ روپے کی رقم ادا کر کے جعلی ویوز حاصل کیے، گانے کو سوشل میڈیا پر شیئر کرنے کے حوالے سے جانچ پڑتال کررہے ہیں، جن صارفین نے اسے شیئر کیا ہوگا انہیں بھی شامل تفتیش کیا جائے گا۔

دوسری جانب گلوکار بادشاہ نے پولیس کے بیان کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ مجھے نوٹس ملا جس کے بعد میں نے تفتیشی ٹیم کے سامنے پیش ہوکر بیان ریکارڈ کرا دیا۔

ان کا کہنا تھا کہ پولیس کے جھوٹے اور بے بنیاد دعوے کی سختی سے تردید کرتا ہوں کیونکہ تفتیش کے دوران میں نے ایسی کوئی بات کی اور نہ ہی کوئی سوال پوچھا گیا۔ بادشاہ نے مزید کہا کہ میری ٹیم اس مسئلے کو دیکھ رہی ہے ہم جلد ہی معاملے کو حل کر کے تمام حقائق عوام کے سامنے لائیں گے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >