مجھے افسوس ہے کہ میں شوبز انڈسٹری کا حصہ ہوں، سیمی راحیل

مجھے افسوس ہے کہ میں شوبز انڈسٹری کا حصہ ہوں، سیمی راحیل

پاکستان کی شوبز انڈسٹری کی سینئر اداکارہ سیمی راحیل کا ویڈیو اور تصاویر شیرنگ ایپ انسٹاگرام پر اپنی پوسٹ میں ندا یاسر کے شو کے سکرین شاٹ شیئر کرتے ہوئے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہنا تھا کہ مجھے افسوس ہے کہ میں شوبز انڈسٹری کا حصہ ہوں۔

سینئر اداکارہ کا اپنی پوسٹ میں ندا یاسر کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے پاکستان الیکٹرونک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی سے ندا یاسر کے مارننگ شو کے خلاف ایکشن لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پانچ سالہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل اور پھر اس کے والدین کو اپنے شو میں بلاکر بیہودہ سوالات پوچھنا کہاں کی انسانیت ہے؟

سیمی راحیل نے اپنے پوسٹ میں یہ بھی کہا کہ کیسے آپ لوگ ٹی آر پیز اور لوگوں کی توجہ اپنی جانب مبذول کروانے کے لیے اس قدر بے بس اور غیر انسانی ہو سکتے ہیں؟ لوگوں کے درد اور تکالیف کو کیش کروانا انتہائی قابل افسوس اور گھٹیا عمل ہے۔

خیال رہے کہ میزبان ندا یاسر نے اپنے مارننگ شو میں کراچی میں زیادتی کے بعد قتل ہونے والی پانچ سالہ بچی مروہ کے والدین کو بلا کر ان سے واقعے کی تفصیلات پوچھیں جس پر بچی کی والدہ آبدیدہ ہو گئی اور رونے لگی۔

ندا یاسر کے پروگرام کے بعد سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے بھی ایک نا ختم ہونے والا تنقید کا سلسلہ شروع ہو گیا جو تاحال جاری ہے، سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے شدید تنقید اور رد عمل سامنے آنے پر ندا یاسر نے اپنے ایک ویڈیو پیغام میں معافی بھی مانگی ہے۔

  • Sab say phalay morning show katam ho nay chaye Kahan say legtay hein ya morning show jis mein ya khud model ban suba suba mekap let pat ho Kar bahat jati hein ya kon se class ko represent Kar rahi hein jis class ko show Kar rahi ho Bibi. Wo ya morning show nahi dek ti achye dress up ho Kar BAAT Kar ti hein bachi k sath zati hogi bohat hi Sharam ki BAAT hai Ary k liye is Bibi say kaho apnay show Roz deko kabi b Nahi dekpay gi


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >