ڈرامہ’دل ناامید تو نہیں’کو پیمرا کا نوٹس،یمنہ زیدی اورعمیر رانا کا ردعمل

ڈرامہ"دل ناامید تو نہیں" کو پیمرا کا نوٹس،یمنہ زیدی اورعمیر رانا کا ردعمل

پاکستان میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا ) کی جانب سے ڈرامہ سیریل”دل ناامید تو نہیں” کے مواد کو ضابطہ اخلاق کے مطابق بنانےکے نوٹس پر ڈرامہ میں کام کرنے والی اداکارہ یمنہ زیدی اور عمیر رانا کا ردعمل سامنے آیا ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کو انٹرویو دیتے ہوئے ڈرامہ میں مرکزی کردار ادا کرنے والی یمنہ زیدی کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ پہلے بھی میرے کئی ڈراموں کو پیمرا نے نوٹسز بھیجے، مگر میں اس نوٹس سے خوش نہیں ہوں اس سے مجھے تکلیف پہنچی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں صرف ڈراموں میں اداکاری نہیں کرنا چاہتی میں چاہتی ہوں میرے ہر ڈرامے کا کوئی مقصد ہو میں بہت سوچ سمجھ کر اسکرپٹ کا انتخاب کرتی ہوں، انہوں نے کہا کہ "دل ناامید تو نہیں” میرے لیے بہت اہم ہے میں اس کی ہر قسط دیکھتی ہوں، پیمرا نے جو نوٹس اس ڈرامے کو بھیجا اس کے خلاف سوشل میڈیا پر بھی باتیں ہورہی ہیں۔

یمنہ زیدی نے مزید کہا کہ اس ڈرامے میں معاشرے کے جن پہلوؤں پر بات کی گئی ہے وہ عام پہلو نہیں ہیں، ہمیں ان پر ضرور بات کرنی چاہیے اگر ہم ان حساس پہلوؤں پر بات نہیں کریں گے تو کیا صرف خبریں ہی دیکھیں گے۔

پیمرا نوٹس کے حوالے سے اداکار عمیر رانا نے ٹویٹر پر اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی ایف آئی اے انسانی اسمگلنگ کے حوالے سے بہترین کام کررہی ہےاور ہم اس عظیم مقصد میں اپنی ایک چھوٹی سی کوشش کررہے کہ عوام تک آگاہی پہنچا سکیں تاکہ وہ غلامی کے ادوار کی اس جدید تجارت کا حصہ نہ بنیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں دعوت دیتا ہوں کہ پیمرا وہ کرے جو صحیح ہے، وہ نہ کرے جو مقبول ہو، پیمرا اس جہاد میں ہمارا ساتھ دے تاکہ ہم اپنے ملک اور اس معاشرے کو اس گھناؤنے دھندے سے پاک کرسکیں۔

واضح رہے کہ نجی ادارے سے نشر کیے جانے والے اس ڈرامے میں انسانی اسمگلنگ اور بچوں کے جنسی استحصال سمیت خواتین پر ہونے والے مظالم کو دکھایا گیا ہے، پیمرا نے چند روز پہلے اس ڈرامے کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ ڈرامے کے مواد کو ضابطہ اخلاق کے مطابق ڈھالا جائے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >