ماریہ بی کا بھارتی فیشن ڈیزائنر کے پاکستان میں برائیڈل شوٹنگ کرنے پر برہمی کا اظہار

فیشن ڈیزائنر ماریہ بی کا بھارتی فیشن ڈیزائنر کے پاکستان میں برائیڈل شوٹنگ کرنے پر برہمی کا اظہار

فیشن ڈیزائنر ماریہ بی نے حال ہی میں پاکستان میں بھارتی فیشن ڈیزائنر ابھینو مشرا کی عروسی ملبوسات کی شوٹنگ  پر برہمی کا اظہار کیا اور پی ٹی آئی حکومت سے سوال کیا کہ اب حکومت کے دعوے کدھر گئے۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ڈیزائنر نے لاہور میں عروسی ملبوسات کے حوالے سے شوٹنگ کی جس کے کلپ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد پاکستان کی معروف ڈیزائنر ماریہ بی نے اس حوالے سے ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے انسٹاگرام پر اپنی پوسٹ کے ذریعے وزیراعظم عمران خان سمیت تمام پاکستانیوں کو اس واقعہ پر متوجہ کیا۔

ماریہ بی نے اپنی انسٹاگرام اسٹوریز میں شوٹ کی گئی تصاویر و ویڈیوز کے اسکرین شاٹ شیئر کرتے ہوئے بتایا کہ ابھینو مشرا کے ملبوسات کی شوٹنگ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں ہوئی ہے۔

ماریہ بی نے بھارتی شوٹ کا حوالہ دیتے ہوئے سوال کیا کہ اگر بھارتی فیشن ڈیزائنر پاکستان میں شوٹنگ کر سکتے ہیں تو پھر پاکستانی فیشن ڈیزائنر پڑوسی ملک کیوں نہیں جا سکتے؟ انہوں نے مزید کہا کہ آخر ہم بھی بطور انڈسٹری ایسے رد عمل کا اظہار کیوں نہیں کرتے، جیسے بھارتی ڈیزائنر کرتے ہیں اور وہ پاکستانیوں کو وہاں آنے سے روکتے ہیں۔

فیشن ڈیزائنر ماریہ بی کا بھارتی فیشن ڈیزائنر کے پاکستان میں برائیڈل شوٹنگ کرنے پر برہمی کا اظہار

انہوں نے وزیراعظم عمران خان سے سوال پوچھتے ہوئے کہا کہ کہ بھارتیوں کے یہاں کام کرنے پر وزیر اعظم کشمیر کے تناظر میں کیا احکامات دیں گے۔

فیشن ڈیزائنر ماریہ بی کا بھارتی فیشن ڈیزائنر کے پاکستان میں برائیڈل شوٹنگ کرنے پر برہمی کا اظہار

وائرل ویڈیوز میں جہاں شوبز انڈسٹری سے جڑی شخصیات اس شوٹ پر تعجب کا اظہار کررہی ہیں وہیں مداح بھی خاصے ناراض دکھائی دے رہے ہیں اور حکومت سے بھارت کی جانب سے شوبز انڈسٹری میں کام پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کررہے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >