جب سعود شفقت چیمہ کو مرنے کیلئے پانی میں چھوڑگئے، شفقت چیمہ واقعہ سناتے روپڑے

اداکارہ شفقت چیمہ جو کہ پاکستانی فلموں میں منفی کردار ادا کرنے والے نامور اور پسندیدہ ترین اداکاروں میں شمار ہوتے ہیں انہوں نے ایک نجی ٹی وی کو دیئے گئے انٹرویو کے دوران فلمی کریئر کا ایک ایسا واقعہ سنایا جس نے سیٹ پر موجود متعدد افراد کو رونے پر مجبور کر دیا۔ اداکار خود بھی واقعہ سناتے ہوئے آبدیدہ ہو گئے۔

شفقت چیمہ نے کہا کہ پاکستان فلم انڈسٹری میں جدید سہولتوں کی عدم دستیابی کے باعث ایکشن فلموں کی شوٹنگ کیلئے اداکار اپنی جان جوکھم میں ڈالتے ہیں جس کا دیکھنے والوں کو شاید ہی اندازہ ہو۔

انہوں نے بتایا کہ ایک بڑی مشہور فلم تھی "دل سنبھالا نہ جائے” اس کی شوٹنگ کے دوران راول ڈیم میں ایکشن سین فلمبند کیا جانا تھا۔ مجھے چونکہ تیرنا نہیں آتا تھا اس لیے پہلے سے پانی کی گہرائی کا اندازہ کرکے جگہ کا تعین کیا کہ مجھے کہاں تک جانا ہے۔

اداکار نے بتایا کہ سعود کو مجھ پرکودنا تھا لیکن عکسبندی کے دوران ان کا وزن مجھ پرپڑنے کی وجہ سے توازن برقرار نہ رکھ سکا اور دلدلی زمین ہونے کی وجہ سے ہم گہرائی میں چلے گئے۔ سرپانی سے باہرنکالا تو کوئی 12، 14 فٹ دور جا چکے تھے میرے پاؤں زمین پرنہیں لگ رہے تھے۔

اس موقع پرجذبات پرقابو نہ پاسکنے پر شفقت چیمہ نے آنسو بھری آنکھوں کے ساتھ بتایا کہ میں نے سعود سے کہا کہ مجھے بچالو کیونکہ اسے تیرنا آتا تھا لیکن سعود نے مجھے دھکادے کر پرے پھینکا اور خود تیرتا ہوا نکل گیا۔

شفقت چیمہ نے بتایا کہ میں کہہ رہا تھا لوگو مجھے بچالو، مجھے پکڑ لو لیکن آگے آنے والا کوئی نہیں تھا۔ میری حالت دیکھ کر میرا چھوٹا بھائی ندیم چیمہ جو اب ڈائریکٹر ہے، مجھے بچانے کیلئے پانی میں کودا لیکن اسے بھی تیرنا نہیں آتا تھا۔ میں نے اسے ڈوبتے دیکھا بس اس کے بعد ہوش نہیں رہا۔

ان کا کہنا تھا کہ پھرمجھے ہوش نہیں آیا صرف اتنا یاد ہے کہ ہم دونوں بھائیوں کو بچانے کے لیے کوئی شخص جو اللہ کا فرشتہ بن کر آیا تھا پانی میں کودا اور اسی نے ہمیں بچایا اور ہمیں کنارے تک لے کر آیا۔ بہت مشکل سے ہماری جان بچی کیونکہ جب مجھے اور میرے بھائی کو پانی سے باہر نکالا گیا تو ہم دونوں کے پیٹ اور پھیپھڑوں میں پانی بھرا ہوا تھا۔

شفقت چیمہ کی باتیں سن کر سیٹ پر موجود دیگر آرٹسٹوں کی آنکھیں بھی بھر آئیں۔ شرکا کا کہنا تھا کہ پاکستان فلم انڈسٹری میں شوٹ ہالی ووڈ طرز کی چاہتے ہیں لیکن اداکاروں کی حفاظت کا کوئی مناسب بندوبست نہیں کیا جاتا۔

  • Swimming and life saving are two separate areas. An expert swimmer knows that life saving in waters without proper training can be dangerous to him also……I know it bcoz I did a life saving course and believe me life saving swimming is way different then normal swimming…..


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >