شوہر بچہ نہیں جیون ساتھی ہے، شوہر کے کام کرنا فرض نہیں، اداکارہ و ماڈل نادیہ حسین

پاکستانی اداکاراؤں کے شوہر اور ان کے فرائض کے حوالے سے الگ الگ خیالات ہیں، اس بار اداکارہ و ماڈل نادیہ حسین نے اپنے شوہر کے حوالے سے کہا کہ شویر کے کام کرنا بیوی کا فرض نہیں،میراشوہر بچہ نہیں لائف پارٹنر ہے،نادیہ حسن نے اپنے شوہر کے ہمراہ نجی ٹی وی کے پروگرام میں شرکت کی جہاں ان سے میزبان نے سوال کیا کہ کیا عورت کا فرض ہے کہ وہ اپنے شوہر کے کام کرے؟جس پر شوہر کی موجودگی میں ہی نادیہ حسین نے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نادیہ حسین نے کہا کہ شوہر کے کام کرنا عورت کا فرض نہیں ہے۔

میزبان نے نادیہ حسین سے مزید پوچھا کہ کیا آپ نے کبھی اپنے شوہر کے کام کیے ہیں؟نادیہ حسین نے کہا کہ میں نے کبھی اپنے شوہر کا کوئی کام نہیں کیا کیونکہ یہ میرا بچہ نہیں بلکہ میرے لائف پارٹنر ہیں،اداکارہ نے مزید وضاحت دی کہ اگر بیوی اپنے شوہر کو کھانے دے تو یہ بات غلط نہیں لیکن اگر شوہر حکم دے کر بیوی سے اپنے کام کروائے تو یہ غلط ہے،میں اس چیز کے خلاف ہوں کہ بیوی پہلے اپنے کام کرے اور پھر بعد میں شوہر کے حکم پر اس کے بھی کام کرے۔

اداکارہ نے بتایا کہ میں نے اپنے بچوں کی پرورش بھی اس طرح نہیں کی جیسا ہمارا معاشرہ چاہتا ہے،جہاں مرد کے تمام کام عورت کرے،سوشل میڈیا پر ماڈل نادیہ حسین کے انٹرویو کا کلپ وائرل ہورہاہے،صارفین کی جانب سے ملے جلے ردعمل دیا جارہاہے، اس سے قبل اداکارہ و ماڈل صدف کنول نے شوہر شہروز سبزواری سے متعلق کہا تھا کہ شوہر کے کام کرنا بیوی کی ذمہ داری ہے۔

صدف کنول کا کہنا تھا کہ پاکستان کی سماجی روایات اور ثقافات یہ ہیں کہ شادی شدہ خاتون کو نہ صرف شوہر کے کپڑے استری کرنے ہوتے ہیں بلکہ ان کے جوتے بھی اٹھانے ہوتے ہیں،انہوں نے کہا تھا کہ وہ شوہر کے کپڑے استری نہیں کرتیں اور نہ ہی انہیں جوتے اٹھاکر دیتی ہیں مگر انہیں معلوم ہوتا ہے کہ ان کے شوہر کو کب،

کس وقت کون سی چیز کی ضرورت ہوتی ہے اور ایسا علم ہر خاتون کو ہونا چاہیے،بطور بیوی اور عورت ہونے کے ناتے ایک خاتون کو یہ بھی علم ہونا چاہیے کہ ان کے شوہر کو کون سے کھانے پسند ہیں اور وہ کب غذا کھانا چاہتے ہیں۔جس پر سوشل میڈیا پر ایک ہلچل مچ گئی تھی۔

    • کوی رشتہ بھی اس طرز پر نہیں چلتا ۔یوں تو دوستوں پر بھی کچھ فرض نہیں ہوتا لیکن وہ بھی ایک دوسرے کے کام کر دیتے ہیں ہمارے ہاں اس موضوع کو اچھی طرح سے سمیٹا نہیں جا سک رہا ۔ہر انسان کا ایک دوسرے کے کام کرنے کے بغیر رشتے کا وجود ممکن نہیں ہوتا لیکن اس میں زور دینے کی بات یہ ہے اس میں عزت محبت اور احساس ہونا چاہیے ۔سختی اور زبردستی نہیں باہمی انڈرسٹینڈنگ چاہے

  • What you said is complete TRASH! And who wants to know how you treat your family? Who are you? There are countless people in this world who made their life trash.

    Khooni liberals, May Allah keep this Ummah save from people like you.

  • بیوی نے شوہر کے کام نہیں کرنے…. ایسے ہی شوہر بولے گا کہ میں نے بیوی کے کام نہیں کرنے….. تو پھر یہ رشتہ کس مقصد کے لیے جوڑا جاتا ہے؟


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >