آئندہ کبھی ریسرچ کے بغیر بات نہیں کرونگی ، ندایاسر کا اپنے وائرل کلپ پر ردعمل

نجی ٹی وی پروگرام کے مارننگ شو کا ایک پرانا کلپ سوشل میڈیا پر ایسا وائرل ہوا کہ اس نے میزبان ندایاسر کو سوشل میڈیا سینسیشن بنا کر رکھ دیا، وہ گزشتہ کئی روز سے ٹوئٹر کے ٹاپ ٹرینڈز میں شامل ہیں۔

اے آر وائے ڈیجیٹل پر پیش کیے جانے والے مارننگ شو کا 2016 کا ایک کلپ وائرل ہوا ہے جس میں میزبان نے انجنیئرنگ کے 2 طالبعلموں کو مدعو کر رکھا ہے۔ میزبان ان سے فارمولا کار سے متعلق سوال کرتی ہیں مگر اپنی لاعلمی کے باوجود بھی سوال پر سوال کرتی رہتی ہیں۔

ندا یاسر نے مہمانوں کا تعارف کروایا کہ انھوں نے ایک گاڑی ایجاد کی ہے، اس کے بعد پوچھا کہ فارمولا ریسنگ کار جو آپ نے بنائی ہے اس میں کتنے لوگ بیٹھ سکتے ہیں، جس کے جواب میں مہمان نے وضاحت دی، ایک فارمولا ریسنگ کار ہے جس میں صرف ایک ہی شخص بیٹھ سکتا ہے۔ ندا یاسر نے مہمان کی بات مکمل ہونے سے پہلے ہی کہہ دیا کہ اچھا تو ابھی آپ نے شروعات ایک گاڑی بنانے سے کی ہے یعنی یہ ایک چھوٹی گاڑی ہے۔

میزبان کو نہیں پتا کہ فارمولا ون کار اصل میں ہوتی کیا ہے یہ مہمانوں نے جان لیا، لیکن ندا یاسر پھر بھی چپ نہ رہیں، اپنی ذہانت کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک اور احمقانہ سوال داغ دیا، کہا ابھی فارمولا بنایا ہے آپ ابھی تجربہ کیا ہے، مہمان ہوئے پریشان، بڑی مشکل سے بتایا کہ یہ ایک فارمولا کار ہے جو ریسنگ کیلئے استعمال ہوتی ہے اور اس میں ایک ہی شخص بیٹھ سکتا ہے۔

ندایاسر نے اب اس وائرل کلپ پر ردعمل دیتے ہوئے اپنے ایک حالیہ انٹرویو میں کہا ہے کہ یہ 7 سال پرانا کلپ ہے اور سمجھ نہیں آئی کہ اب کیسے وائرل ہو گیا۔ انہوں نے بتایا کہ وہ ٹوئٹر استعمال نہیں کرتیں انہیں اس ٹرینڈ کا کسی سے پتہ چلا تھا۔

انہوں نے اپنی غلطی تسلیم کرتے ہوئے کہا کہ یہ کلپ دیکھ کر تو میں خود ہنس رہی ہوں یہ کافی مضحکہ خیز ہے۔ مگر میں مانتی ہوں کہ یہ میری غلطی تھی کوشش کروں گی کہ آئندہ کبھی ریسرچ کے بغیر بات نہ کروں۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں نے ہزاروں بہت اچھے شوز کیے ہیں، جس کا فیڈ بیک بھی بہت اچھا آتا ہے، مگر ان میں کی گئی کوئی بات کبھی بھی وائرل نہیں ہوتی ہے اور اس چیز کا مجھے بہت زیادہ دکھ ہوتا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >