کیا واقعی اس نام کا کوئی سکول ہے؟

Photo School

کیا پاکستان میں واقعی پورن سٹار (PornStar) نامی سکول کھل گیا؟ سوشل میڈیا پر وائرل اس تصویر کی حقیقت سامنے آگئی۔

تفصیلات کے مطابق اس سکول کو رحیم یار خان میں پروفیسر جاوید اختر واہلہ نامی ایک صاحب چلارہے ہیں۔ جب اس تصویر پر موجود ان صاحب سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ یہ سکول PornStar نہیں Pole Star ہے جسے کسی نے شرارت کرکے اور ردوبدل کرکے سوشل میڈیا پر شئیر کیا۔

پروفیسر جاوید نے مزید کہا کہ یہ تصویر فوٹوشاپڈ اور ہماری ساکھ کو خراب کرنیکی کوشش ہے۔

Social Media

معلوم نہیں کسی سوشل میڈیا صارف نے سکول کی ساکھ خراب کرنے کیلئے ایسا کیا یا دل لگی اور لوگوں کو چہرے پر مسکراہٹیں لانے کیلئے ایسا کیا؟ اگر یہ تصویر لوگوں کو ہنسانے یا دل لگی کیلئے فوٹوشاپ کی گئی ہے تو یہ بہت مذموم حرکت ہے جو نہ صرف سکول انتظامیہ بلکہ سکول میں زیرتعلیم بچوں یا انکےو الدین کیلئے دل آزادی کا باعث ہے۔

اس پر سوشل میڈیا صارفین کا کہنا ہے کہ یہ گھٹیا حرکت کرنیوالوں کو فورا معافی مانگنا چاہئے۔ کچھ سوشل میڈیا صارفین نے ایف آئی اے سے کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

ایک سوشل میڈیا صارف نے اس پروپیگنڈا کو فونٹ کے فرق کا حوالہ دیکر ایکسپوز کیا کہ اور کہا کہ اس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ فوٹوشاپڈ تصویر ہے۔

https://twitter.com/salman2979/status/1221112461186740224

یہ افسوسناک امر ہے کہ کسی کی ساکھ کو نقصان پہنچانے کیلئے اس قسم کی گھٹیا حرکت کی جائے۔ اس سلسلے میں سوشل میڈیا صارفین کو ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا چاہئے اور تصاویر شئیر کرنے سے پہلے انکی جانچ کرلینی چاہئے۔ اگر تصاویر فوٹوشاپڈ ہوں تو اسکی مذمت کرنا اور شئیر کرنیوالے کو ٹوکنا چاہئے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>